امریکی خام تیل 2 ماہ کی کم ترین سطح پر آگیا

June 18, 2018
 

چین نے درآمدی امریکی خام تیل پر ڈیوٹی عائد کرنے کی دھمکی دے دی جس کے بعد امریکی خام تیل 2 فیصد کے قریب سستا ہوکر دو ماہ کی کم ترین سطح 63 ڈالر 77 سینٹس فی بیرل پر آگیا۔

عالمی مارکیٹ میں کاروباری ہفتے کے پہلے روز خام تیل کی قیمتوں میں گراوٹ دیکھی جا رہی ہے۔ معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ امریکا کی جانب سے حالیہ درآمدی چین کی اسٹیل مصنوعات پر ڈیوٹی لگانے کے معاملے کے بعد اب چین نے بھی درآمدی امریکی خام تیل پر ڈیوٹی عائد کرنے کی دھمکی دے دی ہے ۔

اس دھمکی کے ردعمل میں امریکی خام تیل ایک اعشاریہ 9فیصد کمی سے اپریل کی کم ترین سطح 63 ڈالر 77 سینٹس فی بیرل پر آگیا ۔ اس کے ساتھ ہی لندن برینٹ خام تیل بھی ایک اعشاریہ ایک فیصد کمی سے 72 ڈالر 61 سینٹس فی بیرل پر ٹریڈ ہو رہا ہے ۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ امریکی صدر نےچین سے منگوائی جانے والی 50 ارب ڈالر مالیت کی مصنوعات پر بھاری ڈیوٹی عائد کی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ان اقدامات سے دو طرفہ تجارت کم ہوگی اور عالمی معاشی نمو بھی متاثر ہوگی۔


مکمل خبر پڑھیں