مسیحیوں کو نمائندہ منتخب کرنیکا حق دیا جائے ، راجو الیگزینڈر

July 08, 2018
 

سوسائٹی فار کرائسٹ اسپین کے صدر راجو الیگزینڈر کا کہنا ہے کہ پاکستان میں مسیحیوں کو اپنا نمائندہ منتخب کرنے کے لئے ووٹ کا حق دیا جائے جبکہ خود سے کسی نمائندے کا نام منتخب کر لینا مسیحیوں کے حقوق سلب کرنے کے مترادف ہے۔

ان خیالات کا اظہار سوسائٹی فار کرائسٹ اسپین کے صدر نے روزنامہ جنگ سے بات کرتے ہوئے کیااور کہا کہ پاکستان میں مسیحیوں کو سیاسی حوالے سے اپنا نمائندہ منتخب کرنے کے لئے باقاعدہ الیکشن ہونا چاہیئے تاکہ مسیحی برادری اپنی پسند اور منتخب کئے جانے والے نمائندے کے فلاح و بہبود کے کاموں اور سیاسی وابستگیوں کوجانچ سکیں ۔

انہوں نےمزید کہا کہ پاکستان میں مقیم مسیحی برادری پر کوئی بھی جیتنے والی سیاسی جماعت ایک نمائندہ منتخب کر دیتی ہے جس کا مطلب یہ ہے کہ ہم نے یہ نمائندہ تم پر مقرر کر دیا ہے اور اب تم اپنی پسند نا پسند کو پس پشت رکھو جبکہ یہ سراسر نا انصافی ہے۔

راجو الیگزینڈر کا کہنا تھاکہ پاکستان کے آرڈیننس میں دوبارہ سے یہ قانون شامل کیا جائے کہ مسیحی اپنا نمائندہ الیکشن کے ذریعے منتخب کریں اگر ایسا نہ کیا گیا تو سمجھا جائے گا کہ سیاسی نمائندہ منتخب کرنے کے حوالے سے مسیحیوں کے حقوق کی پاسداری نہیں کی جا رہی ہے۔


مکمل خبر پڑھیں