’’باربی کیو‘‘ بنائیں ضرور، لیکن پہلے چند باتوں پر عمل کریں

August 22, 2018
 

جب ہم کسی مزیدار اور خوشبودارکھانے کا تصور کرتے ہیں تو ذہن میں جن چیزوں کے نام آتے ہیں ان میں یقیناً باربی کیو (Barbeque) بھی سرفہرست ہے۔ باربی کیو کا اپنا ہی ایک مزہ ہے،جبکہ باربی کیو بنانا بھی کسی تفریح سے کم نہیں ۔ عید قرباں کا موقع ہو،خاندان کے تمام افراد جمع ہوں ، باربی کیو کی تیاری کے دوران ٹائم پاس کرنے کے لیے گیم کھیلے جا رہے ہوں اور ساتھ میں باربی کیو کی اشتہاانگیزخوش بو دعوت کا مزہ دوبالا کر دیتی ہے۔عید قرباں پر دعوت کے لیے باربی کیو زیادہ بہتر ہے، اس میں آپ کو کئی گھنٹے کچن میں مختلف ڈشز بناتے ہوئے نہیں گزارنے پڑتے اور جن کو بنانے میں کوئی تفریح بھی نہ ہو،جبکہ باربی کیو بناتے ہوئے سب پرجوش ہوتے ہیں اور اس موقعے کو بھرپور انجوائے کرتے ہیں۔

باربی کیو زیادہ تر مرد حضرات بناتے ہیں، لیکن خواتین بھی باربی کیو بناسکتی ہیں،اس سلسلے میں ہم آپ کی مدد کرسکتے ہیں۔چند ٹپس کے ساتھ مردوں کو حیران کر سکتی ہیں، کیو نکہ جب آپ کچن میں لذیذ کھانے بنا سکتی ہیں تو باربی کیو ں نہیںبنا سکتیں۔ ضرورت ہے تو بس کچھ مفید ٹوٹکوں کی ،جو درج ذیل ہیں۔

باربی کیو کے لیے گوشت کی تیاری:

یہ انتہائی ضروری ہے کہ باربی کیو کرنے کے لیے گوشت کو چند گھنٹے پہلے ہی میرینیٹ کر کے رکھیں، چاہے یہ قیمہ ہی کیوں نہ ہو۔ اگر آپ اسے رات بھر میرینیٹ رکھیں تو اس کا نتیجہ اور اچھا نکلتا ہے۔بوٹیاں ہمیشہ چھوٹی بنائیں۔ اس طرح وہ میرینیٹ اچھی طرح ہوں گی اور جلدی پک بھی جائیں گی۔

گوشت پر تھوڑی سی چربی رہنے دیں، یہ باربی کیو کو جوسی بننے میں مدد دیتی ہے۔

بکرے اور گائے کے گوشت کو اچھی طرح گلانے کے لیے کچا پپیتا استعمال کریں جو اس کے ذائقے کو بھی بہتر بناتا ہے۔

باربی کیو گرل (Grill) کا استعمال:

باربی کیو گرل کو استعمال کرنے سے پہلے اچھی طرح صاف کر لیں، کیونکہ گندی گرل سے باربی کیو میں جلنے کا ذائقہ شامل ہو جاتا ہے۔ اس لیے باربی کیو بنانے سے پہلے اور بعد میں گرل کو تھوڑا سا جلانا فائدہ مند رہتا ہے کیونکہ اس طرح اس پر لگے گوشت اور چربی کے ٹکڑے جل کر اُتر جاتے ہیں اور گرل کو صاف کرنا آسان ہو جاتا ہے۔

کوئلے کے چھوٹے ٹکڑے استعمال کریں۔ اگر ٹکڑے بڑے ہوں تو ان کو توڑ کر چھوٹا کر لیں۔

اگر کوئلوں کو جلانے کے لیے کوئی چیز یعنی مٹی کا تیل وغیرہ استعمال کریں تو تیل ڈالنے کے بعد فوراً آگ مت لگائیں، بلکہ تیل کو کوئلوں میں جذب ہونے دیں، ورنہ کوئلے بہت جلد جل کر ختم ہو جائیں گے اور آپ کے باربی کیو میں بھی مٹی کے تیل کی خوشبو بس جائے گی۔

کوئلوں کو پوری گرل میں متوازن پھیلائیں تاکہ آگ سب جگہ برابر رہے۔

کوئلوں کا بیگ گرل کے قریب ہی رکھیں تاکہ ضرورت کے تحت کوئلے ڈالتی رہیں۔

ایک اسپرے بوتل میں پانی ڈال کر بھی پاس رکھیں تاکہ اگر شعلے زیادہ بڑھنے لگیں تو انھیں کم کیا جا سکے۔

کوئلوں کو دہکانے کے لیے دستی پنکھا یا کوئی شیٹ وغیرہ استعمال کریں۔

کوئلے کے شعلوں کو نہ زیادہ اوپر تک آنے دیں اور نہ ہی انھیں بلکہ ختم ہونے دیں بلکہ آگ کو کنٹرول میں رکھیں۔ باربی کیو کے دوران یہی چیز سب سے اہم ہے اور باربی کیو کا سارا انحصار اسی بات پر ہے۔

باربی کیو کے لیےگوشت کو پکانا:

گرل میں آگ تیار کرنے کے بعد اب وقت آگیا ہے کہ گوشت کو باربی کیو کیا جائے۔ یقیناً آپ کو معلوم ہو گا کہ مچھلی اور چکن تو بہت جلدی پک جاتے ہیں لیکن بکرے یا گائے کا گوشت گلنےمیں زیادہ وقت لیتا ہے۔ اس لیے کوئلوں کی آگ کو اسی حساب سے رکھیں کہ گوشت آسانی سے گل جائے۔

ایک پیالے میں آئل قریب رکھیں اور اسے کسی برش کی مدد سے ضرورت کے تحت گوشت پر لگاتی رہیں۔ آئل زیادہ لگانے سے پرہیز کریں کیونکہ زیادہ آئل گوشت کو جلا دے گا۔

گوشت کو گرل پر ضرورت کے تحت پلٹتی رہیں تاکہ یہ جلنے سے محفوظ رہے۔

گوشت کو ضرورت سے زیادہ مت پکائیں، ورنہ یہ خشک ہو جائے گا۔

باربی کیو کو تازہ اور گرما گرم کھائیں، اگر آپ نے اسے ٹھنڈا ہونے کے لیے چھوڑ دیا تو یہ ضائع ہو جائے گا۔

پھل اور سبزیاں بھی باربی کیو کی جا سکتی ہیں اور باربی کیو کیے ہوئے پھلوں کا ذائقہ بھی نرالہ ہوتا ہے جیسا کہ باربی کیو کیا ہوا پائن ایپل۔

مزیدار باربی کیو کے ذائقے کو دوبالا کرنے کے لیے اس کے ساتھ مزیدار سی چٹنی بھی بنا لیں۔

اگر آپ چائے پینے کی شوقین ہیں تو بار بی کیو گرل پر موجود دھکتے ہوئے کوئلوں پر چائے بھی بنا سکتی ہیں۔اس چائے کہ سوندھے پن کا جواب نہیں۔


مکمل خبر پڑھیں