کم عمر بچوں کی ڈرائیونگ پر والدین کیخلاف کارروائی ہوگی

September 12, 2018
 

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس علی اکبر قریشی نے کم عمر بچوں کی ڈرائیونگ پر پابندی عائد کرتے ہوئے کہا کہ اگر کوئی کم عمر بچہ ڈرائیونگ کرتے پکڑا گیا تو اس کے والدین کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

کم عمر بچوں کی ڈرائیونگ کے خلاف لاہور ہائیکورٹ میں جسٹس علی اکبر قریشی نے سول سوسائٹی کے عبداللہ ملک کی جانب سے دائر کردہ درخواست کی سماعت کی۔

جسٹس علی اکبر قریشی نے کیس کی کارروئی کے دوران ریمارکس دیئے کہ کم عمر بچے چنگ چی رکشہ، موٹر سائیکل اور گاڑی نہیں چلاسکتے ، اس سلسلے میںکم عمر ڈرائیونگ کرنے والے بچوں کے والدین کو پہلے مرحلے میں طلب کرکے بیان حلفی لیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ اس قانون پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے گا، اگر پھر بھی کم عمر بچے ڈرائیونگ کرتے پکڑے جائیں تو ان کے والدین کے خلاف کارروائی کی جائےگی ، کیونکہ نابالغ کی ذمہ داری اس کے والدین پر ہوتی ہے۔

جسٹس علی اکبر قریشی نے کہا کہ بیانی حلفی کی خلاف ورزی کرنے والے والدین کو حوالات میں بند کر دیا جائے گا۔


مکمل خبر پڑھیں