Advertisement

جِلد کی صحت کیلئے مفید اور مضر غذائیں

May 24, 2019
 

غذائیت سے بھرپور خوراک صحت کے لیے اہم ہے کیونکہ غیر صحت بخش خوراک آپ کے میٹابولزم کو نقصان پہنچا کر موٹاپے، دل، جگر اور جِلد کے امراض میں مبتلا کرسکتی ہے۔ وقت گزرنے کے ساتھ ماہرین غذائیت کو نشاستہ آور غذاؤں کی اہمیت اور ان کے طبی فوائد کا ادراک ہو چکا ہے۔ معالجین مختلف عارضوں میں مبتلا مریضوں کوہیلتھ اینڈ فٹنس ڈائٹ چارٹ مہیا کرتے ہیں کہ کون سی غذائیں مفید ہیں اور کون سی مضر۔

فائدہ مند غذائیں

ماہرین غذائیت کا اتفاق ہے کہ چہرے اور جِلد کی صحت و توانائی کے لیے جہاں موئسچرائزر اور فیس واش جیسی مصنوعات خواتین کے جِلد کی حفاظت کرتی ہیں، وہیں خوراک کے معاملے میں غفلت کسی بڑے عارضے میں جکڑ سکتی ہے۔ ذیل میں وہ غذائیں بتائی جارہی ہیں،جن کے اجزا جِلد کےلیے فائدہ مند ہیں۔

روغنی مچھلی:سامن، سر مئی اور خار ماہی مچھلی صحت مند جِلد کے لیے بہترین خوراک ہیں۔ یہ اومیگا تھری فیٹی ایسڈ سے مالا مال ہیں، جو جِلد کو دبیز، نم اور کیل مہاسوں سےمحفوظ رکھنے کے لیے اہم جزو ہے۔ اس کے علاوہ اس میں وٹامن ای دوسرا جزو ہے، جو جِلد کو خراب ہونے اورسوجن سے بچاتا ہے۔ یہ مچھلیاں اعلیٰ معیاری پروٹین سے بھرپور ہیں، جو جِلد کو مضبوط بناتا ہےجبکہ زنک کی موجودگی جِلد کے نئے خلیات کو بنانے میں معاون ہوتی ہے۔

اخروٹ:اخروٹ ضروری چکناہٹ، زنک، وٹامن ای اورسی کا اچھا ماخذ ہے۔اس میں غذائی اجزا، سیلینیم اور پروٹین موجود ہوتے ہیں جو بیکٹیریا سےجِلد کو محفوظ بناتے ہیں۔

ٹماٹر: ٹماٹر وٹامن سی اور تمام اہم کيروٹين خاص طور پر لائسو پین کا اچھا ماخذ ہے۔ یہ آپ کی جِلد کو دھوپ کی شدت سے بچاکر چہرے کی جھریوں کو روکنے میں معاون و مددگار ہوتا ہے۔

سبز چائے:سبز چائے میں پایا جانے والاسفید بلوری رنگت کا catechinنامی سفوف وہ طاقتوراینٹی آکسیڈنٹ ہے،جو جِلد کو دھوپ کی تپش سےبچاتا، لال دھبوںسے روکتا، پانی کی کمی کو دور کرتا اور جِلد کو دبیز اور لچکدار بناکر چہرے کو شگفتہ بناتا ہے۔

سویابین:سویابین میں شامل آئسو فلیونز جھریوں کو کم کرکے کولاجن کی مقدار بڑھا کرجِلد کو نرم کرکے خشکی کے اثرات سے بچاتا ہے۔ اتناہی نہیں، یہ شدید دھوپ سے جِلد کو ہونے والے نقصان سے بچاکر محافظ کا کردار ادا کرتا ہے۔

ڈارک چاکلیٹ:اس میں موجود کوکو اینٹی آکسیڈنٹ آپ کی جِلد کو سورج کی تپش میں جلنے سے بچاکر جھریوں کو ختم کرتا، جِلد کو موٹا بناکر خون کی گردش کو رواں کرتا اور رنگت کو بہتر بناتا ہے۔

نقصان دہ غذائیں

ہماری صحت بخش خوراک ہی ہماری جِلد کو موسمی اثرات سے بچاکر ہمیں سدابہار اور توانا رکھتی ہے۔ نقصان دہ غذاؤں کے اثرات ہماری جِلد پر نمایاں پڑتے ہیں۔ ماہرین غذائیت کئی غذاؤں کو آپ کی خوبصورتی اور جِلد کے لیے زہر قاتل جانتے ہیں۔اسی لیے وہ درج ذیل غذاؤں سے پرہیز کا مشورہ دیتے ہیں۔

غیر معیاری اور پروسیسڈ غذائیں:ماہر غذائیت کہتے ہیں کہ غیر معیاری اور ڈبوں میں بند پروسیسڈ غذاؤں سے پرہیز کریں کیوں کہ ان میں کیمیائی پروسیسنگ کے دوران نشاستے جل جاتے ہیں، جو زہر خورانی کا موجب بن کر جِلد کو ناقابل تلافی نقصان سے دوچار کرتے ہیں۔ ان غذاؤں میں پانی کی مقدار کم ہوکر جسم میں بخارات پیدا کرکے کئی جِلدی امراض میں مبتلا کرتی ہے۔

غیر نامیاتی غذائیں:غیر نامیاتی غذاؤں (Non-Organic Foods) میں ہارمونز، پیسٹیسائیڈز، ہربیسائیڈز اور فنگسائیڈز شامل ہوتے ہیں۔ یہ زہریلے کیمیائی عناصر اور زائد وٹامنز ہماری شریانوں کو جماکر سوجن سمیت بہت سے جِلدی امراض میں مبتلا کر دیتے ہیں۔

دودھ سے بنی مصنوعات:ہمارے ہاں گائے اور بھینس سے دودھ کی زائد پیداوارحاصل کرنے کے لیے ہارمونز کے انجکشن لگائے جاتے ہیں، جس سے ایسٹروجن کی مقدار بڑھ کرچہرے پر کیل مہاسوں اور سوجن کی وجہ بنتی ہے۔ ہارمونز کی یہ زائد مقدار آپ کودودھ، دہی، آئس کریم، چیز وغیرہ میں ملے گی۔

بازاری کھانوں سے دور رہیں:ہمارے ہاں ڈھابوں اور عام ہوٹلوں، حتٰی کہ بڑے بڑے ریسٹورنٹس پر بھی معیاری کھانے دستیاب نہیں۔ اس لیے بازاری کھانوں کےچٹخاروں کے بجائے گھر کے تازہ بنے کھانے کو ترجیح دیں۔ خواتین بھاپ اور ہلکی آنچ پرکھانا پکائیں تا کہ غذائی اجزا ضائع نہ ہوں۔


مکمل خبر پڑھیں