Advertisement

سونے کے ذرات جمع کرنے والی پھپھوندی دریافت

May 27, 2019
 

سائنس دانوں نے آسٹریلیا کے ایک مقام پر انوکھی پھپھوندی (فنگس ) دریافت کی ہے ،یہ پرتھ شہر سے 130 کلومیٹر دور بورڈ نگٹن کے ایک گائوں کی مٹی میں گلابی رنگت میں پائی گئی ہےیہ پھپھوندی سونے کے ذرات کو گھلا کر ایک جگہ جمع کرتی رہتی ہے ۔آسٹریلیا کا مشہو ر ادارہ اے سی ایس آئی آر او سےو ابستہ ارضی خر دحیاتیات( جیو مائیکرو بایو لوجی ) کے ماہرین نے اس شہرکی مٹی کا بھر پور جائزہ لیا۔سائنس دان ڈاکٹر سنگ بوہو نے معلوم کیا کہ اس فنگس سے سپر آکسائیڈ نامی کیمیکل خارج ہوتا ہے،جس میں سونا گھل جاتا ہے۔ اگلے مر حلے میں فنگس پگھلے ہوئے سونے میں ایک اور کیمیکل ملاتا ہے،جس کے سبب سونا دوبارہ ٹھوس ہوجاتا ہے اور فنگس کی سطح پر اس کے باریک ذرات اُبھرآتے ہیں۔ اُمید ہے کہ اس سے کا ن کن کمپنیاں بھی فائدہ اُٹھا سکیں گی۔ یہ فنگس اتنی چھوٹی ہے کہ انسانی آنکھ سے اس کو دیکھنا بھی ممکن نہیں، اسی لیے ماہرین اس کو دیکھنے کے لیے ایک نیا نظام تیار کررہے ہیں۔


مکمل خبر پڑھیں