Advertisement

میڈیکل ٹیسٹ

June 19, 2019
 

الطاف حسین حالی

دو ملازم ایک کالا اور گورا دوسرا

دوسرا پیدل مگر پہلا سوار راہ وار

تھے سول سرجن کی کوٹھی کی طرف دونوں رواں

کیونکہ بیماری کی رخصت کے تھے دونوں خواست گار

راہ میں دونوں کے باہم ہو گئی کچھ ہشت مشت

کوکھ میں کالے کی اک مُکّا دیا گورے نے مار

صدمہ پہنچا جس سےتِلّی کو بہت مسکین کی

آ کے گھوڑے سے لیا سائیس نے اس کو اتار

ٹھوک کر کالے کو گورے نے تو اپنی راہ لی

چوٹ کے صدمے سے غش کالے کو آیا چند بار

آخرش کوٹھی پہ پہنچے جا کے دونوں پیش و پس

ضارب اپنے پاؤں اور مضروب ڈولی میں سوار

ڈاکٹر نے آ کے دونوں کی سُنی جب سرگزشت

تہ کو جا پہنچا سخن کی سُن کے قصّہ ایک بار

دی سند گورے کو لکھ کر جس میں تھی تصدیقِ مرض

اور یہ لکھا تھا مسائل ہیں بہت زار و نزار

یعنی اِک کالا نہ جس گورے کے مُکّےسے مرے

کر نہیں سکتا حکومت ہند پر وہ زینہار

اور کہا کالے سے تم کو مل نہیں سکتی سند

کیونکہ تم معلوم ہوتے ہو بظاہر جان دار

ایک کالا پِٹ کے جو گورے سے فوراً مر نہ جائے

آئے بابا اس کی بیماری کا کیونکر اعتبار


مکمل خبر پڑھیں