Advertisement

دو لڑکیوں نے بھارتی صدر کو خون سے خط لکھ دیا

July 06, 2019
 

بھارت میں دو لڑکیوں نے جھوٹے کیس کے الزام سے تنگ آ کربھارتی صدر رام ناتھ کووند کو خون سے خط لکھ کر مدد طلب کرلی ۔

دونوں لڑکیو ں نے خط میںاپنے خوف اور خدشات کا اظہار کیا ہے اور دعویٰ کیا ہے کہ انہیںدھوکا دہی کے الزام میں جھوٹے کیس میں ملوث کیا جارہا ہے ۔انہوںنے خواہش کا اظہار کیا کہ اگر انہیں انصاف نہیںدیا جاسکتا تو انہیں اُن کے اہل خانہ سمیت مار دیا جائے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق خون سے لکھے گئے خط میں لڑکیوں نے دعویٰ کیا کہ کبوتر بازی (ویزا فراڈ کیس) میں بھارتی پینل کوڈ کے سیکشن 420 کےتحت انہیںملزم قرار دیا جارہا ہے۔

انہوں نے لکھا کہ ہم نے کئی بار پولیس سے کیس کی تحقیقات کرنے کی درخواست کی لیکن انہوںنے کچھ بھی سننے سے انکار کر دیا۔

پولیس نے لڑکیوں کی جانب سے عائد کئے گئے الزامات ماننے سے انکار کرتے ہوئے مؤقف اختیار کیا کہ ان دو لڑکیوں کے خلاف کریمنل کیس دائر کیا گیا ہے جس کی تحقیقات کی جارہی ہیں۔


مکمل خبر پڑھیں