بوجھو تو جانیں.... !

بچوں کا جنگ
January 11, 2020

1۔گلشن کی پہچان ہے اُس سے

گل دانوں میں جان ہے اُس سے

اُس کے بنا ہر سیج ادھوری

ہر محفل کی شان ہے اُس سے

تتلی کو محبوب وہی ہے

بھونرے کو مرغوب وہی ہے

نفرت سے کیا لینا اُس کو

اُلفت سے منسوب وہی ہے

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

2۔کون سی وہ اک چیز ہے، بولو

ہر جانب تم گھوم کے دیکھو

وہ ہر سو موجود ہے بچو

رنگ بِنا بھی ہے وہ سُندر

اُس کے دم سے آج ہیں گھر گھر

جام، صراحی، کلسی، گاگر

بن اُس کے جل جائے کھیتی

بن اُس کے مر جائے مچھلی

سمٹے تو بن جائے قطرہ

پھیلے تو ہو جائے دریا

پھول، شجر انسان، پرندہ

سب کے سب ہیں اُس سے زندہ

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

3۔ریشم جیسے بال ہیں اُس کے

نرم بہت ہی گال ہیں اُس کے

کان ہیں چھوٹے، مونچھیں لمبی

ناک ہے چپٹی، دُم ہے موٹی

رشتے میں ہے شیر کی خالہ

گویا آفت کا پرکالہ

بچو، اُس کا نام بتاؤ

پھر اُس کی تصویر بناؤ

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

4۔ہر دم پیار لٹانے والی

ہر پل ناز اُٹھانے والی

ہم سب کے آرام کی خاطر

اپنا چین گنوانے والی

دُور کی کوڑی آج نہ لاؤ

جھٹ سے اُس کا نام بتاؤ

اک اک کر کے پھر اے بچو

اُس کے احسانات گناؤ

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

5۔ہر سو، چرچا آج ہے میرا

سب سے اُونچا تاج ہے میرا

سب ہی میرے گن گاتے ہیں

ہر دل پر اب راج ہے میرا

رونے اور ہنسانے والا

کانوں کو چونکانے والا

دُنیا بھر کی تازہ تازہ

خبریں میں ہوں لانے والا

آنکھوں دیکھا حال سُناؤں

اَن دیکھی ہر چیز دِکھاؤں

سات سمندر پار کی سب کو

گھر بیٹھے میں سیر کراؤں

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

جوابات1: ۔پھول2۔پانی3۔بلّی4۔ماں5۔ٹیلی ویژن