| |
Home Page
جمعرات 03 ذیقعدہ 1438ھ 27 جولائی 2017ء
June 29, 2017 | 07:51 pm
سعودی حکام کی سابق ولی عہد کو نظربند کرنے کی اطلاعات کی تردید

Saudi Officials Denied Reports Of Arrest Of Former Crown Prince

Saudi Officials Denied Reports Of Arrest Of Former Crown Prince

سعودی حکام نے ان اطلاعات کی تردید کی ہے کہ سابق ولی عہد محمد بن نائف کو ان کے محل تک محدود کر دیا گیا ہے۔

حکام کا یہ بھی کہنا ہے کہ محمد بن نائف کی نقل وحرکت پرکوئی پابندی نہیں، امریکی جریدے کی رپورٹ مسترد کرتے ہیں۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک سینئر سعودی عہدے دار کا کہنا ہے کہ سابق ولی عہد اور سابق وزیر داخلہ محمد بن نائف مہمانوں سے ملاقاتیں کر رہے ہیں اور ان کی یا ان کے خاندان کی نقل و حرکت پر کسی قسم کی پابندی عائد نہیں ۔

سعودی عہدے دار نے کہا کہ یہ خبر 'من گھڑت ہے ،خبر کی اشاعت پر محمد بن نائف امریکی جریدے کے خلاف مقدمہ دائر کر سکتے ہیں،وہ سوائے اپنے سرکاری عہدوں سے دست بردار ہونے کے کچھ بھی تبدیل نہیں ہوا۔

امریکی اخبارنے اپنی رپورٹ میں کہا تھا کہ شہزادہ محمد بن نائف کو ان کے محل میں نظربند کر دیا گیا ہے اور ان کے بیرون ملک سفر پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ امریکی جریدے نے محمد بن نائف کواُن کے محل میں نظربند کرنے کی خبر دی تھی اور سابق ولی عہد کے بیرون ملک سفر پر پابندی لگنے کا دعویٰ بھی کیا تھا۔