| |
Home Page
ہفتہ 28 صفر المظفر 1439ھ 18 نومبر 2017ء
October 23, 2017 | 11:05 am

اسلام آباد: قائداعظم یونیورسٹی میں کشیدگی،70 طلبہ گرفتار

Prortest In Quaid E Azam University 70 Students Arrested

Prortest In Quaid E Azam University 70 Students Arrested

اسلام آبادکی قائد اعظم یونیورسٹی میں تدریسی عمل میں خلل ڈالنے اور احتجاج کرنے والے 70 طلبہ کو گرفتارکرلیا گیا، یونیورسٹی حکام کا دعویٰ ہے کہ ہڑتال کے معاملے پر طلبہ کونسلز میں پھوٹ پڑ چکی ہے۔

قائد اعظم یونیورسٹی میں 16 روز بعد  پیر کے روز تدریسی عمل کا آغاز ہوالیکن بعض احتجاجی طلبہ کے گروپوں نے جامعہ میں ہلڑ بازی کی اور احتجاج شروع کردیا جب کہ مشتعل طلبہ کلاسوں میں گھس گئے اور اساتذہ کو ڈرا دھمکا کر کلاسز ختم کرانے کی کوشش کی۔

یونیورسٹی میں صورتحال خراب ہونے پر وائس چانسلر ڈاکٹر جاوید اشرف نے پولیس کو طلب کیا جس کے بعد پولیس، ایف سی اور لیڈیز پولیس بھی یونیورسٹی پہنچ گئی۔

پولیس نے صورتحال پر قابو پانے کی کوشش کی اور اس دوران پولیس اور طلبہ کے درمیان معمولی تصادم بھی ہواجس کے بعد پولیس نے کریک ڈاؤن کرتے ہوئے 70 کے قریب طلبا کو گرفتار کرلیا۔

پولیس کا کہنا ہےکہ احتجاج کرنے والے طلبا کو تھانے منتقل کردیا گیا ہے اور اب یونیورسٹی میں صورتحال قابو میں ہے۔

واضح رہے کہ رواں ماہ کے اوائل میں قائداعظم یونیورسٹی میں طلبا نے بہتر سہولتوں، ہاسٹل اور فیسوں میں اضافہ واپس لینے کے لیے احتجاج شروع کیا تھا جس پر یونیورسٹی انتظامیہ اور طلبا کے درمیان مذاکرات بھی ہوئے جو ناکام ہوگئے۔

یونیورسٹی انتظامیہ نے اس معاملے پر تین رکنی کمیٹی بھی بنائی تھی لیکن وہ بھی معاملہ حل نہ کرسکی جس کےبعد طلبا کے احتجاج کےباعث یونیورسٹی تین ہفتے تک بند رہی۔