• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کنگنا رناوت کا جاوید اختر پر ہراسگی کا الزام

تنازعات میں گھری بالی ووڈ اداکارہ کنگنا رناوت نے مشہور بھارتی شاعر اور رائٹر جاوید اختر پر ہراسگی اور خودکشی پر اُکسانے کا الزام عائد کر دیا۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق جاوید اختر کی جانب سے کنگنا رناوت پر 2020ء میں ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا گیا تھا۔

مقدمے کی سماعت 4 جولائی کو ممبئی کی مقامی عدالت میں ہوئی، مقدمے کی سماعت کے دوران کنگنا رناوت کا کہنا تھا کہ جاوید اختر نے انہیں ریتھک روشن سے معافی نہ مانگنے پر ڈرایا، دھمکایا اور ذہنی اذیت میں مبتلا کر دیا تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ جاوید اختر نے دھمکیاں دیتے ہوئے کہا کہ ’ہم دھوکے بازوں کی نشاندہی میں بالکل بھی وقت ضائع نہیں کریں گے، عوام جان جائیں گے کہ تمہارا اور ریتھک کا چکر نہیں تھا، اگر ریتھک روشن کے بارے میں بات کی تو تمہیں اتنا بدنام کر دیا جائے گا کہ خودکشی کے سوا کوئی راستہ نہیں رہے گا، اگر اپنی عزت بچانی ہے تو ریتھک روشن سے معافی مانگ لو‘۔

کنگنا رناوت نے اہنے بیان میں مزید کہا کہ جاوید اختر چاہتے تھے کہ ان کی دھمکیوں کے دباؤ میں آ کر میں خود کشی کر لوں، انہوں نے مجھے ذہنی تناؤ اور کرب میں مبتلا کیا۔

واضح رہے کہ جاوید اختر نے یہ مقدمہ 2020ء میں ایک ٹیلی ویژن انٹرویو کے دوران کنگنا رناوت کے مبینہ ہتک آمیز اور بے بنیاد تبصروں کے خلاف دائر کیا تھا۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید