آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار 15؍شعبان المعظم 1440ھ 21؍اپریل 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
کوئٹہ(اسٹا ف رپورٹر) بلوچستان بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن کوئٹہ کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر سراج احمد کاکڑ نے کہاہے حکومت اور محکمہ تعلیم سمیت بلوچستان بورڈ کی موثر حکمت عملی اور سنجیدہ کو ششوں سے کاروباری حضرات اور بوٹی ما فیا کا کاروبار بند ہو چکا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کے دوران کیا اس موقع پر کنٹرول امتحانات سید عباد اللہ شاہ غرشین بھی موجود تھے۔انھوں نے کہا کہ امتحانات سے نقل کے رجحان کو ختم کرنے کیلئے وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ زہری ، چیف سیکرٹری سیف اللہ چٹھہ اور وزیرتعلیم عبدالرحیم زیارتوال کے احکامات پر سختی سے عمل درآمد کو یقینی بنانے میں ضلعی انتظامیہ بھرپور اقدامات اٹھارہی ہے تاکہ امتحانات کے موقع پر فوٹواسٹیٹ کی کوئی دکان سینٹروں کے قریب کھلی نہ ہوں سوشل میڈیا پر غلط پروپیگنڈہ کرنے والے بورڈ کی کارکردگی سے خائف ہیں محکمے اور مذکورہ تنظیموں کے جو آفیسران یا ساتھی اس طرح کی افواہیں پھیلا رہے ہیں ان کے خلاف سخت محکمانہ تادیبی کارروائی عمل میں لائی جائیگی کیونکہ یہ عناصر حکومت اورمحکمہ تعلیم کی بدنامی کا باعث بن رہے ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت اور محکمہ تعلیم سمیت بلوچستان بورڈ کی موثر حکمت عملی اور سنجیدہ کو ششوں سے کاروباری

حضرات اور بوٹی ما فیا کا کاروبار بند ہو چکا ہے جس کی وجہ سے انہیں بورڈ سے کوئی پذیرائی نہیں مل رہی اور ان کی دال بھی نہیں گل رہی اس موقع پر کنٹرولر امتحانات سید عباد اللہ شاہ غرشین نے بتایا کہ امتحانات کے دوران کوئٹہ میں4 اسسٹنٹ کمشنر ڈپٹی کمشنر کوئٹہ کی سر براہی میں امتحانی سینٹروں کے قریب دفعہ144 نافذ کر کے فوٹو اسٹیٹ کی دکانیں بند کرانے میں اپنا موثر کردار ادا کر رہے ہیں جس کی وجہ سے ان حکومتی احکامات پر سختی سے عمل ہو رہا ہے ۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں