آپ آف لائن ہیں
بدھ7؍رمضان المبارک 1439ھ 23؍مئی2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
The Time Arrive That America Should Leave Saying Do More Rehman Malik

سابق وزیر داخلہ سینیٹر رحمان ملک کا کہنا ہے کہ وقت آگیا ہے کہ امریکا پاکستان کو ڈو مور کہنا چھوڑے اور افغانستان سے پاکستان میں ہونے والی دہشت گردی کے خاتمے کے لیے امریکا کو ڈو مور کہا جائے۔

اپنے ایک آرٹیکل میں سینیٹر رحمان ملک کا کہنا تھا کہ پاکستان میں ہونے والی 90 فی صد دہشت گردی کے تانے بانے افغان مہاجر کیمپوں سے ملتے ہیں۔ بھارت نے پاک افغان سرحد کے ساتھ سفارتی کور میں اپنے دہشت گردی کے نیٹ ورک بنا رکھے ہیں، جہاں سے را اور این ڈی ایس کی مدد سے پاکستان میں دہشت گردی ہوتی ہے۔

x
Advertisement

پیپلز پارٹی کے رہنما نے کہا کہ بطور وزیر داخلہ ان کی نگرانی میں فاٹا میں مینگل اور حقانی نیٹ ورک کے خلاف آپریشن کیا گیا۔

رحمان ملک نے کہا کہ عالمی امن کےلیے پاکستان بہت کر چکا اب امریکا کو چاہیے کہ وہ بین الاقوامی سطح پر پاکستان مخالف مہم رکوائے ان کا کہنا تھا کہ افغانستان میں منشیات کی کا شت روکی جائے تو 90فی صد دہشت گردی ختم ہوسکتی ہے۔

​​
Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں