آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل17؍شعبان المعظم 1440ھ 23؍ اپریل 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کے احکامات کی پیروی ہے یا اسے صوبے کے سربراہ کی سادگی کہیں کہ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اتوار کی شام کسی پروٹوکول کے بغیر عام شہری کی طرح کلفٹن میں شہید بینظیر بھٹو پارک میں منعقدہ کراچی فوڈ فیسٹیول پہنچے۔

مراد علی شاہ نے عام گاڑی میں بظاہر سیکورٹی کے بغیر سفر کیا اور پارک پہنچ کرنے وی آئی پی طریقے سے فوڈ فیسٹول دیکھنے کی بجائے ٹکٹ خریدنے کیلئے کھڑے شہریوں کی لائن میں لگے، انہوں نے اپنی باری آنے پر لائن میں لگ کر فیسٹول کا ٹکٹ لیااور ٹکٹ کے تین سو روپے اپنی جیب سے ادا کیے۔

وزیر اعلیٰ سندھ ٹکٹ دکھا کر عام شہری کی طرح فیسٹول میں شریک ہوئے۔

ترجمان کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ فیسٹیول میں شریک لوگوں کے ساتھ گھل مل گئے، شہریوں کی بڑی تعداد نے وزیر اعلیٰ سندھ کے ساتھ تصاویر بنوائیں اور سیلفیاں لیں، وزیراعلیٰ بننے کے بعد مراد علی شاہ کی جانب سے اس طرح کی خبریں اکثر سامنے آتی رہتی ہیں لیکن موجودہ صورتحال میں اسے چیف جسٹس آف پاکستان کے تازہ احکامات کا اثر کہاں جا رہا ہے۔

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے گزشتہ روز حکومتی عہدیداروں کے پروٹوکول یا وی وی آئی پی موومنٹ پر سخت نکتہ چینی کی تھی اور کہا تھا کہ یہ سلسلہ فوری طور پر ختم ہونا چاہیے، جسٹس ثاقب نثار گزشتہ روز خود بھی کسی پروٹوکول کے بغیر شہر میں رہے اور بابائے قوم قائداعظم محمد علی جناح کے مزار پر حاضری دی۔

 

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں