آپ آف لائن ہیں
اتوار11؍رمضان المبارک 1439ھ 27؍مئی 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
American Action Will Be Red Line Between America And Pakistan Relations

وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ امریکا کی پاکستان میں یکطرفہ کارروائی دو طرفہ تعلقات کےلیے ریڈ لائن ہوگی، پاکستان کو ڈرانا، دھمکانا یا زورزبردستی غیر مفید ہوگی۔

امریکی نشریاتی ادارےکوانٹرویو میں وزیرداخلہ احسن اقبال نے کہا کہ افغانستان میں ناکامیوں کاملبہ پاکستان پرڈالاجاتاہے، دہشتگردی کےمسئلہ کےحل کےلیےعسکری کےساتھ سیاسی حل بھی ہوناچاہئے۔

x
Advertisement

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان امن کیلئے عالمی برادری کے ساتھ مل کرکام کرنے کوتیار ہے، امریکاسے باہمی احترام پرمبنی تعلقات چاہتےہیں، پاکستانی مفادات کیخلاف کوئی سازش یاکوشش ہوئی توجواب دیاجائے گا، پاکستان امداد نہیں تجارت چاہتا ہے، ترقیاتی شراکت داری کےخواہاں ہیں۔

احسن اقبال نے کہا کہ افغانستان میں امن کیلئےضروری ہےپاکستان اورامریکامل کرکام کریں، امریکا کوجنوبی ایشیااورافغانستان کومختلف اندازسے دیکھناہوگا۔

انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کیخلاف سب سےزیادہ قربانیاں پاکستان نےدیں، گزشتہ چندسال میں پاکستان نے60ہزارسےزائدجانیں دیں، دہشتگردوں سےجنگ میں پاکستانی معیشت کو25ارب ڈالرسےزائدنقصان اٹھانا پڑا۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں معمولی امریکی امداد ملی، دہشتگردی کیخلاف جنگ امریکی امدادکیلئےنہیں بلکہ عوام کے تحفظ کیلئےلڑی۔

​​
Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں