آپ آف لائن ہیں
جمعہ9؍ رمضان المبارک 1439ھ 25؍مئی2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کراچی کے پوش علاقوں کلفٹن اور ڈیفنس میں آن لائن بکنگ کرکے منشیات کی ہوم ڈلیوری دینے والے گروہ کی سرغنہ لڑکی سمیت 3ملزمان کو درخشاں پولیس نے گرفتار کرکے منشیات برآمد کرلی۔

گرفتار ملزمہ مہوش عرف سونیا کی ڈیفنس و کلفٹن کے تعلیمی اداروں کے اندر تک رسائی ہے۔

x
Advertisement

درخشاں تھانے کے ایس ایچ او اورنگزیب خٹک کے مطابق درخشاں تھانے کی پولیس پارٹی نے چیکنگ کے دوران مشکوک دیکھ کر ایک کار کی تلاشی لی تو اس میں سوار ملزمہ مہوش آگسٹن عرف سونیا، عثمان شکیل اور سعد رفیق کے قبضے سے کرسٹل چرس کی مختلف مقدار برآمد ہوئی۔

پولیس کے مطابق یہ منشیات چھوٹے چھوٹے پیکٹس میں تھی جسے ملزمان نے ڈیفنس اور کلفٹن میں مختلف مقامات پر سپلائی کرنا تھا۔

پولیس کے مطابق ملزمان کے خلاف ایف آئی آر نمبر 74/2018 درج کرکے تفتیش شروع کردی گئی ہے۔

پولیس نے ملزمان سے کی گئی ابتدائی تفتیش کے بعد بتایا کہ گرفتار ملزمہ مہوش عرف سونیا کی ڈیفنس کے اسکولوں، کالجز اور یونیورسٹیز کے اندر تک رسائی ہے جو مختلف حیلے بہانوں سے تعلیمی اداروں کے اندر جاکر مالدار اور بڑے گھرانوں کے طلباء اور طالبات کو منشیات سپلائی کرتی تھی۔

یہاں تک کہ پوش علاقے کے مختلف بنگلوں کے اندر جا کر بھی ملزمہ مطلوبہ افراد کو منشیات فراہم کرتی رہی۔

ذرائع کے مطابق ملزمان کا زیادہ تر دھندا موبائل فون کے ذریعے چلتا ہے اور ان کی بیشتر بکنگ انٹرنیٹ کے ذریعے ہوتی رہی اور ڈلیوری گھومنے پھرنے کے دوران یا کیفے اور گھروں تک دیتے تھے۔

طریقہ واردات کے مطابق ملزم عثمان شکیل گاڑی چلاتا تھا مہوش گاڑی کی فرنٹ سیٹ پر بیٹھی تھی تاکہ چیکنگ کے دوران وہ کوئی فیملی کی طرح لگیں اور پولیس یا رینجرز انہیں چیکنگ کیلئے نہ روکے۔

پولیس کے مطابق ملزمان پوش علاقوں میں آئس، کرسٹل چرس، ہیروئن اور دیگر منشیات کی ڈلیوری دیتے تھے۔

ملزمان نے دوران تفتیش انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے کراچی کے کئی بڑے خاندانوں کے بچوں اور بچیوں کو منشیات کی لت میں لگایا ہے۔

پولیس کے مطابق ملزمان کو کل عدالت میں پیش کیا جائے گا، ان کے دیگر ساتھیوں کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

​​
Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں