آپ آف لائن ہیں
بدھ 8؍ شعبان المعظم 1439ھ 25؍ اپریل2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
x
دبئی میں پہلے ڈیجیٹل کرنسی بینک کا آغاز

دبئی کلچر اینڈ آرٹ اتھارٹی نے فن وثقافت کے لیے جدید ترین بلاک چین پاورڈ ڈیجیٹل بنک کا آغاز کیا ہے یہ دنیا میں اپنی نوعیت کا پہلا پلیٹ فارم ہوگا جہاں جدید ٹیکنالوجی کو اس طرح استعمال کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ بلاک چین ٹیکنالوجی سے مراد انٹر نیٹ کے ذریعے سے تیار کیا گیاایسا ڈیجیٹل کھاتا ہوتا ہے جس میں ردوبدل ناممکن ہونے کے ساتھ ساتھ اس میں ہرقسم کے کاروباری و مالی لین دین اور استعمال ہونے والی ہرشے کی قدروقیمت اور معاملات کا ریکارڈ ہوتا ہے۔

x
Advertisement

بینک کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ آرٹ ورک کی تجارت میں سہولت کاری کے لیے آرٹ بینک کریپٹو کرنسی کو استعمال کرکے دبئی کو دنیا کے فنون کا مرکز بنائے گی۔

یہ پروجیکٹ دبئی 10ایکس اقدامات کا حصہ ہیں جس کا مقصد دبئی حکومت کے اداروں کو باقی دنیا سے ہر شعبے میں دس برس آگے لے جانا ہے۔دبئی کلچر اینڈ آرٹ اتھارٹی کے قائم مقام ڈائریکٹر جنرل سعید النبودا نے اس حوالے سے کہا کہ ہماری خواہش تھی کہ آرٹ ٹیکنالوجی کےشعبے میں اس طرح آغاز کریں کہ جہاں فنون اور ٹیکنالوجی کو یکجا کیا جائے اور جلد ہی ہمیں اندازہ ہوگیا کہ اس سلسلے میں فنانس اور ٹیکنالوجی کو شامل کرنے کی بھی ضرورت ہے۔

انھوں نے مزیدکہا کہ آرٹ بینک کے ذریعے ہم موثر انداز میں تخلیقی کاموں کے لیے دنیا کی پہلی ڈیجیٹل کریپٹو کرنسی کا آغاز کررہے ہیں۔

یہا ں مقامی فنون پر مبنی معیشت میںکافی مواقع دستیاب نہیں تھے، بالخصوص فنکاروں کو مخصوص ماحول اور پالیسیاں میسر نہیں تھیں جس کے ذریعے وہ اپنی تخلیق کو شیئر کرتے اور اس کی وجہ یہ تھی کہ یہاں ایک غیرشفاف اور اکثروبیشتر دولت مندوں کی مارکیٹ تھی اور آرٹ انڈسٹری دولت مند طبقےتک محدود تھی۔

اب اس پہلی ڈیجیٹل کرنسی بینک کے آغاز سے وقت گزرنے کے ساتھ فائدہ پہنچے گا اور دبئی کی معیشت بھی فروغ پائے گی۔

انھوں نے کہا کہ آرٹ ڈیجیٹل کرنسی بینک، عالمی اور علاقائی آرٹ کا ڈیٹا بیس کو بھی اس میں شامل کرے گا جہاں مصنوعی ذہانت اس کے استعمال کنندگا ن کو اس حوالے سے تلاش اور ملاپ میں معاونت فراہم کرے گا۔

جبکہ اس کے نفاذ کے مرحلے میں معروف بینکوں، سرمایہ کاری کے اداروں اور اسمارٹ سلوشن فراہم کرنے والے اداروں کے ساتھ متعدد شراکت داریوں کے مواقع بھی نکلیں گے۔

​​
Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں