آپ آف لائن ہیں
منگل14؍ محرم الحرام 1440 ھ25؍ستمبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
ایس ایس پی سینٹرل نے 626 پولیس افسران کے تبادلے کردیئے

کراچی کے ضلع وسطی میں منظم جرائم پر قابو پانے کیلئے ایک حکمت عملی کے تحت ایس ایس پی سینٹرل نے بیک وقت 626 پولیس افسران اور اہلکاروں کے تبادلے کردیئے ہیں۔ تبدیل کیے جانے والے بعض افسران اور اہلکار دس دس پندرہ پندرہ سال سے ایک تھانے میں بیٹھے ہوئے تھے۔

پولیس ذرائع کے مطابق کراچی پولیس کی تاریخ میں پہلی بار ہوا ہے کہ ایک ساتھ سیکڑوں ملازمین کو ادھر ادھر کیا گیا ہے۔

ایس ایس پی سینٹرل ڈاکٹر رضوان خان نے جنگ کو بتایا کہ ضلع وسطی میں بطور ایس ایس پی چارج لیتے ہیں، انہوں نے ایک ماہ قبل ہی اس سلسلے میں کام شروع کر دیا تھا۔ ضلع بھر کے تھانوں میں تعینات افسران اور اہلکاروں کی فہرستیں بنا کر ان کی تعیناتی کے دورانیہ کی جان پڑتال کی تو لگ بھگ سات سو پولیس افسران و اہلکار ایسے پائے گئے جو کئی کئی سال سے ایک ہی تھانے میں ڈیوٹی سرانجام دے رہے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایک کانسٹیبل پولیس میں بھرتی ہونے کے بعد جس تھانے میں تعینات ہوا وہ ترقی پاتے پاتے انسپکٹر کے رینک تک چلا گیا مگر کسی اور تھانے میں نہیں گیا۔

ڈاکٹر رضوان خان کے مطابق کسی افسر یا اہلکار کسی تھانے میں دو سال سے زیادہ عرصہ تعینات نہیں ہونا چاہیے۔ ڈاکٹر رضوان خان کے مطابق ان اہلکاروں میں سے بیشتر کا جرائم پیشہ افراد کے ساتھ گٹھ جوڑ بھی پکڑا گیا۔

پولیس کی مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث افراد کے ساتھ نیٹ ورک کو توڑنے کے لئے پہلے مرحلے میں انھیں ان تھانوں سے ہٹا کر ضلع وسطی کے دیگر تھانوں میں تعینات کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایک وقت میں 626 اہلکاروں کی ریکارڈ تقرریاں اور تبادلے ہیں۔ ایس ایس پی سینٹرل ڈاکٹر رضوان کے مطابق یہ سلسلہ جاری رہے گا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں