آپ آف لائن ہیں
منگل7؍ محرم الحرام 1440 ھ18؍ستمبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
ناروے کی فلاحی تنظیم پاکستانی نو جوانوں کو تربیت دے گی

ناروے کی ایک فلاحی تنظیم پاکستان میں معذور نوجوانوں کو معاشرے کا باصلاحیت شہری بنانے کے ایک منصوبے کے تحت انہیں پیشہ ورانہ تربیت دے گی۔

اس منصوبے کا اعلان ناروے کے دارالحکومت اوسلو میں نارویجن پاکستانی سماجی تنظیم ’’سکون‘‘ کے سربراہ شاہد جمیل نے ایک تقریب کے دوران کیا۔

تقریب کے مہمان خصوصی پاکستان کے معروف فلم ڈائریکٹر سید نور تھے جو ان دنوں خصوصی افراد پر ’’سیلفی‘‘ کے عنوان سے اپنی نئی فلم پر کام کررہے ہیں۔

ناروے کی فلاحی تنظیم پاکستانی نو جوانوں کو تربیت دے گی

تقریب میں متعدد شخصیات شریک ہوئیں جن میں ناروے میں پاکستان کی سفیر محترمہ رفعت مسعود اور پاکستان یونین ناروے کے چیئرمین چوہدری قمراقبال، کاروباری و سماجی شخصیت شیخ طارق محمود، نارویجن پاکستانی ثقافتی شخصیت نصراللہ قریشی، ادبی شخصیت عطا انصاری، سماجی شخصیت ملک پرویزمہر اور چودہ اگست کے پروگرام ’’ہم سب کا پاکستان‘‘ کے کوآرڈی نیٹر سلطان حمزہ اعوان قابل ذکر ہیں۔

تقریب کے دوران نقابت کے فرائض معروف کمپیئرشاہ رخ سہیل اور خاتون تسلیم حمید نے  انجام دیئے۔

ناروے کی فلاحی تنظیم پاکستانی نو جوانوں کو تربیت دے گی

شاہد جمیل نے بتایا کہ ان کی تنظیم اس وقت پاکستان میں تین فلاحی منصوبوں پر کام کررہی ہے جن میں معذور افراد کو ویل چیئرز کی مفت فراہمی، ان کے لیے پیشہ ورانہ تربیت اور ان کے حقوق کے بارے آگاہی مہم شامل ہے۔

تنظیم ’’سکون‘‘ پاکستان میں ویل چیئرز کے منصوبے پر حالیہ سالوں سے کام کررہی ہے اور اس منصوبے کے تحت ابتک سینکڑوں معذور افراد کو ویل چیئرز فراہم کی جاچکی ہیں۔ تقریب کے دوران بھی 200 ویل چیئرز کے لیے رقم جمع کی گئی۔

ناروے کی فلاحی تنظیم پاکستانی نو جوانوں کو تربیت دے گی

شاہد جمیل کے مطابق پاکستان میں بے شمار معذور افراد ہیں اور ان میں سے بہت سے بے روزگار نوجوان ہیں جنہیں پیشہ ورانہ تربیت دے کر معاشرے کا باصلاحیت شہری بنایاجاسکتاہے۔

اس سلسلے میں ان کے منصوبے کا نام ’’سکون یوتھ ڈس ایبل امپوورمنٹ‘‘ ہے جس کے تحت پہلے مرحلے میں اس سال ستمبر و اکتوبر سے معذور نوجوان خواتین کو راولپنڈی شہر میں میک اپ کے کورسز کرائے جائیں گے۔ بعد میں اس منصوبے کے تحت دیگر شعبوں میں بھی پیشہ ورانہ تربیت دی جائے گی اور منصوبے کو دیگر شہروں تک پھیلا جائے گا۔

شاہد جمیل نے روزنامہ جنگ کو بتایا کہ اس منصوبے کے سلسلے میں انہیں برطانیہ میں خاتون سماجی کارکن عامرہ شاہ کی تنظیم ’’گوبل پیس و ھارمونی‘‘ اور پاکستان میں شفیق الرحمان کی سربراہی میں قائم تنظیم ’’مائل سٹون’’ کا تعاون بھی حاصل ہے۔

ناروے کی فلاحی تنظیم پاکستانی نو جوانوں کو تربیت دے گی

تقریب سے فلم ڈائریکٹر سید نور، تنظیم ’’گوبل پیس و ھارمونی‘‘ کی عامرہ شاہ، ناروے سے ماریا خان اور مانچسٹر برطانیہ سے مس شاملین نے بھی خطاب کیا۔ مقررین نے پاکستان میں معذور افراد کے لیے سکون کی کاوشوں کو سراہا۔

پروگرام کے دوران پاکستانی سپیشل آرٹسٹ ثناء نسیم کے فن پاروں کی نمائش بھی منعقد ہوئی۔ اپنے فن پاروں کے ذریعے مصورہ نے انسانیت سے محبت اور دنیا میں خوشحالی کا پیغام دیا ہے۔

تقریب کے شرکا نے تصاویر میں کافی دلچسپی لی اور اس موقع پر بہت سی تصاویر خریدی گئیں۔ تقریب کے اختتام پر بعض شخصیات کو ان کی نمایاں سماجی خدمات پر تعریفی اسناد بھی پیش کی گئیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں