آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار 11؍صفر المظفّر 1440ھ 21؍اکتوبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
زبردستی پاکستان لائی گئی خاتون واپس اٹلی پہنچ گئیں

اٹلی کے وزیر خارجہ اینجلینو الفانو نے اعلان کیا ہے کہ زبردستی پاکستان لے جائی جانے والی فرح نامی لڑکی بخیروعافیت اٹلی واپس پہنچ گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مذکورہ لڑکی کے اپنے اطالوی دوست کے ساتھ گہرے مراسم تھے جس کی نتیجے میں وہ حاملہ ہوگئی تھی جس کے بعد لڑکی کے اہلخانہ اس کی مرضی کے خلاف اسقاط حمل کروانے کے لیے اسے پاکستان لے آئے تھے۔

19 سالہ فرح کے پاس اطالوی شہریت نہیں رہائشی اجازت نامہ ہے، اطالوی حکام کے علم میں یہ بات آئی کہ فرح کو دھوکے سے پاکستان لے جا کر اسقاط حمل کے لیے مجبور کیا گیا تو اٹلی کے وزیر خارجہ اینجلینو الفانو نے اسلام آباد میں موجود اطالوی سفارتخانے کو متحرک کردیا۔

اس حوالے سے اطالوی وزارت خارجہ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اطالوی وزیر خارجہ کا بیان شائع کیا جس میں انہوں نے بتایا کہ فرح بخیر و عافیت اٹلی واپس پہنچ گئی ہے ساتھ ہی انہوں نے فرح کو لاہور میں اس کے اہلخانہ کے پاس سے نکال کر اسلام آباد میں اطالوی سفارتخانے پہنچانے پر پاکستانی حکام کا بھی شکریہ ادا کیا۔

زبردستی پاکستان لائی گئی خاتون واپس اٹلی پہنچ گئیں

اطالوی خبر رساں رپورٹس کے مطابق فرح کسی طرح اپنے تحریری پیغامات اٹلی میں موجود اپنے دوست تک پہچانے میں کامیاب ہوگئی تھی جس میں اس نے بتایا تھا کہ اس کے والدین، بھائی کی شادی کا جھانسہ دے کر اسے پاکستان لائے اور یہاں لا کر اسقاط حمل کے لیے اس پر دباؤ ڈالاجبکہ اپنے پیغامات میں اس نے یہ بھی لکھا کہ میری زندگی کو خطرہ ہے۔

فرح جس پاسپورٹ پر پاکستان آئی تھی اسے اس کے اہلخانہ نے ضائع کردیا تھا جس کے بعد اطالوی سفارتخانے نے اس کے پاکستانی پاسپورٹ کا بندوبست کیا اور اٹلی واپسی کے لیے اسے فوری طور پر ویزا جاری کیا۔

اس ضمن میں وزیر خارجہ اینجلینو الفانو نے کہا کہ اٹلی نے مرد و خواتین کے یکساں بنیادی حقوق اور انسانی حقوق کا احترام کرتے ہوئے فرح کے دفاع میں اپنا کردار ادا کیا۔

اس سلسلے میں اٹلی کے سماجی خدمات کےادارے کو فرح کی جانب سے پہلے بھی والد کے خراب رویے کی شکایات موصول ہوئی تھیں تاہم اب ان کی جانب سے اس بات کی ضمانت دی گئی ہے کہ اس کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے گا اور اس کی ضروریات پوری کی جائیں گی۔

واضح رہے ثنا ءچیمہ کے قتل کے بعد اٹلی میں فرح کے معاملے کو بہت اہمیت دی جارہی تھی، ثنا چیمہ پاکستانی نژاد اطالوی خاتون تھیں جنہیں پولیس کے مطابق گھر والوں کی پسند سے شادی سے انکار کرنے پر اہل خانہ نے قتل کردیا تھا جبکہ اس ضمن میں تمام اطالوی سیاستدانوں کی جانب سے فرح کے لیے بھرپور یکجہتی کابھی اظہار کیا گیاتھا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں