آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ 8 ؍ربیع الاوّل 1440ھ 17؍نومبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

تحریک انصاف کے چیئرمین اور متوقع وزیراعظم عمران خان نے آئندہ 100 دنوں کےلیے لائحہ عمل کو حتمی شکل دے دی ہے۔

ذرائع کے مطابق ابتدائی100 دنوں کے لیے وفاقی و صوبائی اداروں کے سربراہان کی تبدیلی کی فہرستیں تیار کرلی گئیں ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی چیئرمین کی زیر صدارت پارٹی کا اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں شاہ محمود قریشی، جہانگیر ترین سمیت پارٹی کے دیگر رہنماؤں نے شرکت کی۔

اس موقع پر عمران خان کا کہنا تھا کہ 100 روزہ پلان کا مقصد پالیسیوں کو تبدیل کرنا ہےجبکہ وفاقی و صوبائی اداروں کے سربراہان کی تبدیلی کی سفارشات ارباب شہزاد نےمرتب کیں جنہیں منظور کرلیا گیا۔

اجلاس میں وفاقی سیکرٹریز کے تبادلوں کی بھی فہرستیں تیار کی گئیں جبکہ سیاسی بنیادوں پر اعلیٰ عہدوں پر تعینات افسران کو بھی تبدیل کیا جائے گا۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ چیئرمین ایف بی آر،نیپراا ، ریلوے، پی آئی اے سمیت کئی اداروں کےسربراہان کی تبدیلی کا منصوبہ تیار کیا گیااور ساتھ ہی سرکاری اداروں میں متعلقہ شعبے کے ماہرین کو تعینات کیا جائے گا تاہم یہ نئی تعیناتیاں 100 دن کےلیے ہوں گی اور 100 دن بعد ان افسران کی کارکردگی جانچی جائے گی۔

یاد رہے کہ انتخابات سے قبل تحریک انصاف نے حکومت میں آنے کی صورت میں 100 دن کے پلان کا اعلان کیا تھاجس کے مطابق حکومت میں آنےکے بعد اصلاحات لائی جائیں گی، فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کریں گے، بلوچستان میں ناراض لوگوں کو منا کر قومی دھارے میں لائیں گے۔

جنوبی پنجاب کو الگ صوبہ بنانا،کراچی کو ترقی دینا اور کراچی کے اداروں کو سیاست سے پاک کرتے ہوئے امن و عامہ اور سیکیورٹی معاملات کو بہتر کر کے بھتے اور لینڈ مافیا کے خلاف کارروائی کرنا ایجنڈے کا حصہ ہے۔

تحریک انصاف کے مجوزہ پلان میں نوجوانوں کے لیے ایک کروڑ نئی نوکریاں پیدا کرنا اور حکومتی اخراجات کو کم کرتے ہوئے آمدن بڑھانا بھی شامل ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں