آپ آف لائن ہیں
منگل7؍ محرم الحرام 1440 ھ18؍ستمبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پاکستان کرکٹ ٹیم کے ابھرتے ہوئے اسٹار فاسٹ بالرحسن علی نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ پاکستانی ٹیم ایشیاء میں فتح حاصل کرے گی اور وہ بھارت کے خلاف میچ میں بھی بھرپورجذبے کے ساتھ میدان میں اتریں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ ایشیا کپ ٹورنامنٹ میںقومی ٹیم اچھی کارکردگی کے باعث ٹائٹل اپنے نام کرنےکے لیے پرعزم ہے۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حسن علی نے کہا ہے کہ ایونٹ میں روایتی حریف بھارت سمیت کسی کو بھی آسان حریف سمجھنے کی غلطی نہیں کریں گے، متحدہ عرب امارات کی کنڈیشنزسے اچھی طرح آگاہ ہیںاور ان کا بہتراستعمال کرتے ہوئے ٹورنامنٹ میں فتح حاصل کریں گے۔

انہوں نےمزید کہا کہ ویراٹ کوہلی ایک بہترین بیٹسمین ہیں ان کی جگہ کوئی بھی نیا پلیئر لے لیں، نیا پلیئردباؤ میں اسٹارکرکٹرجیسا کھیل پیش نہیں کرسکےگاجس کی کمزوری کا ہمیں فائدہ ہوسکتا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ماضی میں ویرات کوہلی کی وکٹ حاصل کرنے کی خواہش ضرور ظاہر کی تھی، ایشیا کپ میں یہ موقع نہیں مل سکے گا لیکن امید ہے کہ مستقبل میں کبھی ان سے سامنہ ضرور ہو گا۔

حسن علی نے کہا کہ اسکواڈ میں 6 پیسرز شامل کرنے کا فیصلہ سلیکشن کمیٹی نے کیا ، میدان میں کس کو اتارنا ہے یہ فیصلہ ٹیم انتظامیہ کرے گی ، ان بولرز میں سے ٹیم کی ضرورت کے مطابق جس کو بھی پلیئنگ الیون میں شامل کیا گیا وہ اپنی ذمہ داریوں سے انصاف کرنے کی کوشش کرے گا۔

انہوں نے بتایا کہ میں نے ٹیسٹ کرکٹ چھوڑنے کے حوالے سے کوئی ارادہ ظاہرنہیں کیا، طویل فارمیٹ میں بھی عمدہ کارکردگی دکھانا چاہتا ہوں۔

ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگر کسی پلیئر کو تینوں فارمیٹس میں ملک کی نمائندگی کرناہے تو فٹنس اعلیٰ معیار کی ہونی چاہیےاور اسی لئے میں اس معاملے پر اپنے آپ پر خصوصی توجہ دیتا ہوں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں