آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ 8 ؍ربیع الاوّل 1440ھ 17؍نومبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سابق وزیراعظم نوازشریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کی تدفین پاکستان میں ہوگی ،ان کی میت وطن لانے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے ۔

سابق وزیراعلیٰ پنجاب اور اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے کہا کہ محترمہ کلثوم نواز کی وفات سے بے حد صدمہ ہوا، فلائٹ دستیاب ہونے پر آج ہی لندن روانہ ہوں گا ۔

انہوں نے کہا کہ کلثوم نوازنےماں،بہن،بیٹی اوراہلیہ کےطورپرمثالی کرداراداکیا،مشکل ترین حالات میں بیگم کلثوم نوازنےمصائب کاڈٹ کرمقابلہ کیا۔

خاندانی ذرائع نے تصدیق کی کہ کلثوم نواز کی تدفین پاکستان میں ہوگی ،انہیں لاہور میں سپرد خاک کیا جائے گا ۔

بیگم کلثوم نواز لندن کے ہارلے اسٹریٹ کلینک میں تقریباً1سال 25دن تک زیرعلاج رہیں،انہیں 17اگست 2017ء کو علاج کےلئے لندن لے جایا گیا تھا جہاں 22اگست کو گلے کے کینسر کی تشخیص ہوئی تھی ۔

ن لیگ کے سینیٹر آصف کرمانی نے کہا کہ کلثوم نواز عظیم محب وطن ،شفیق اور نیک سیرت خاتون تھیںمان کے انتقال کی خبر سے دکھ ہوا ،کیا ہوجاتا اگر نوازشریف ایک ماہ کلثوم نواز کی عیادت و خدمت کرلیتے ؟

انہوں نے کہا کہ نوازشریف اور مریم نواز کو بیگم کلثوم نواز سے دور رکھا گیا ،وہ گزشتہ ایک سال سے بیمار تھیں۔

احسن اقبال نے بیگم کلثوم نواز کے انتقال کی خبر کو بڑا صدمہ قرار دیا ۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں