آپ آف لائن ہیں
بدھ15؍ محرم الحرام1440ھ 26؍ستمبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

فاٹا انضمام کے بعد وفاقی حکومت نے وزارت سیفران ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

جیو نیوز سے گفتگو میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کہا کہ انضمام کے بعد قبائلی علاقوں کے معاملات خیبرپختون خوا حکومت دیکھے گی۔

انہوں نے کہا کہ 17 لاکھ سے زیادہ افغان مہاجرین ملک میں رہ رہے ہیں جو ہمارے مہمان ہیں، ان کی باعزت واپسی چاہتے ہیں۔

وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ کا قلمدان تبدیل کردیا گیا۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ فاٹا سیکریڑیٹ کو بھی ختم کردیا جائے گا جبکہ چار افغان کمشنریٹ اور چیف کمشنر افغان مہاجرین کو وزارت داخلہ کے ماتحت کیاجائے گا۔

اس سے قبل فاٹا اور افغان کمشنریٹ وزارت سیفران کے زیرانتظام کام کر رہے تھے۔

ذرائع کے مطابق خاصہ دار فورس اور لیویز کی خدمات صوبے کے یا وفاق کے پاس ہوں اس بارے میں فیصلہ جلد کرلیا جائے گا۔

ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ قبائلی اضلاع میں خاصہ دار فورس کے 17 ہزار اور 11 ہزار لیویز اہلکار ہیں۔

وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ کو پہلے وزارت سیفران دی گئی تھی تاہم ان کی جانب سے تحفظات کے اظہار کے بعد انہیں وزارت ہاؤسنگ اینڈ ورکس کا قلمدان دے دیا گیا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں