آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ7؍ ربیع الاوّل 1440ھ 16؍نومبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

العزیزیہ کیس، نوا زشریف کے وکلاء کی سماعت ملتوی کرنے کی اپیل مسترد، اسلام آباد ہائیکورٹ میں سزا معطلی کی درخواستوں پر سماعت

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ) سابق وزیراعظم نواز شریف کیخلاف العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس کی سماعت کے دوران نواز شریف کے وکلاء نے کارروائی کل (13ستمبر) تک کیلئے ملتوی کرنے کی استدعا کی، جسے احتساب عدالت نے مسترد کردیا۔ احتساب عدالت نمبر 2 کے جج محمد ارشد ملک نے سابق وزیراعظم کیخلاف نیب ریفرنس کی سماعت کی۔سماعت کے موقع پر نواز شریف کو اڈیالہ جیل سے احتساب عدالت لایا گیا۔سماعت کے دوران نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث ہائی کورٹ میں مصروفیت کی وجہ سے پیش نہ ہوئے۔خواجہ حارث کے معاون وکیل شیر افگن اسدی نے عدالت سے استدعا کی کہ کارروائی کو جمعرات تک کے لیے ملتوی کردیا جائے۔معاون وکیل شیر افگن اسدی نے کہا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف و دیگر کی سزا معطلی کی درخواستوں پر دلائل کے لیے آج اور کل کا دن مختص کیا ہے اور دلائل کی تیاری کے باعث خواجہ حارث یہاں پیش نہیں ہوسکتے۔انہوں نے مزید کہا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں نواز شریف کی سزا معطلی اور بریت کی درخواستوں پر روزانہ کی بنیاد پر سماعت ہوتی ہے۔جس پر احتساب عدالت کے جج نے ریمارکس دیئے کہ ʼیہاں بھی روزانہ کی بنیاد پر ہی سماعت ہوتی ہے۔معزز جج کا مزید کہنا تھا کہ ʼسپریم کورٹ نے چھ ہفتوں میں ریفرنس نمٹانے کا حکم دے رکھا ہے اور دی گئی مدت

ختم ہونے میں چار ہفتے باقی ہیں، اس موقع پر التواء نہیں دیا جاسکتا۔اس موقع پر ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی نے کہا کہ ʼہمارے گواہ واجد ضیا آج بھی جرح کے لیے موجود ہیں۔احتساب عدالت کے جج نے مزید کہا کہ ʼہائیکورٹ میں ڈویژن بنچ دن 12 بجے سماعت کرتا ہے، خواجہ حارث صبح ساڑھے 9 بجے یہاں پیش ہو کر جرح کریں۔ساتھ ہی جج ارشد ملک نے ریمارکس دیئے، ʼایک طرف ہائی کورٹ کی ہدایات ہیں تو دوسری طرف سپریم کورٹ کی، یہ تو نہیں ہوسکتا کہ آپ کی مرضی کی سماعت ہے، صرف روزانہ کی بنیاد پر چلے۔اس کے ساتھ ہی عدالت نے نواز شریف کے وکلاء کی جانب سے جمعرات تک سماعت ملتوی کرنے کی استدعا مسترد کردی۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں