آپ آف لائن ہیں
منگل14؍ محرم الحرام 1440 ھ25؍ستمبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
اسلام آباد (نمائندہ جنگ ) سمندر میں گیس کی تلاش کیلئے آزمائشی کنویں کی کھدائی کے منصوبے کی پبلک ہیئرنگ گزشتہ روز کراچی میں ہوئی ، ڈائریکٹر جنرل تحفظ ماحولیات ایجنسی فرزانہ الطاف،سندھ ادارہ تحفظ ماحولیات ، این آئی او ، ایم ایس اے کے کمانڈر غازی صلاح الدین ، فشریز ڈیپارٹمنٹ سمیت دیگر اداروں کے نمائندوں کے علاوہ بڑی تعداد میں مقامی لوگ شریک ہوئے، فرزانہ الطاف نے بتایا ساحل سمندر سے 250کلومیٹر سمندر میں پہلے پاکستانی کنویں کی آزمائشی کھدائی کا عمل جنوری میں شروع ہوا ہے جس میں او جی ڈی سی ایل ، ای این آئی ، ایکسون اور پی پی ایل پارٹنر ہیں، ای این آئی ان کیساتھ کام کر رہا ہے ان کی طرف سے ماحولیاتی جائزہ رپورٹ ای پی او جمع کرائی گئی تھی جس کی پبلک ہیئرنگ کراچی میں کرائی گئی جس میں تمام متعلقہ اداروں کے نمائندوں نے شرکت کی، سجاول اور ٹھٹھہ کے مقامی افراد نے منصوبہ پر تحفظات کا بھی اظہار کیا،انہوں نے بتایا پہلی مرتبہ پاکستان میں اتنے گہرے پانیوں میں گیس کی تلاش کیلئے کنویں کی کھدائی پر کام شروع ہوا ہے، ڈی جی ای پی اے کا کہنا تھا اس منصوبے کی اگلے مرحلے میں اگر گیس نکل آتی ہے تو تفصیلی ماحولیاتی سٹڈی کی جائیگی، پبلک ہیئرنگ میں متعلقہ اداروں کے حکام نے شہریوں کے تحفظات کے جوابات بھی دیئے، ڈی جی ای پی اے

کا کہنا تھا اس پراجیکٹ میں شامل اداروں کو کراچی میں پلانٹ فار پاکستان مہم میں بھی بھرپور حصہ لینا چاہئے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں