آپ آف لائن ہیں
جمعہ 10؍محرم الحرام 1440ھ 21؍ستمبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
اسلام آباد (نمائندہ جنگ)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی نے وفاقی وزیر آئی ٹی کی اجلاس میں عدم موجودگی، ایجنڈا کے مطابق ممبران کو بریفنگ کی کاپی نہ ملنے پر شدید احتجاج کیا اور چیئرپرسن نے ایگنائٹ کی بریفنگ کو پورا سنے بغیر ہی اجلاس ختم کرتے ہوئے ایجنڈے کو اگلے اجلاس تک کیلئے ملتوی کردیا جبکہ ایف آئی اے کے سینئر افسران کے نہ آنے پر وہاں موجود افسر سے بریفنگ لینے سے بھی انکار کردیا اور آئندہ اجلاس میں ڈی جی ایف آئی اے کو آکر بریفنگ کی ہدایت کی گئی۔اجلاس کے دوران بعض ارکان ایگنائٹ حکام کی طرف سے دی گئی بریفنگ کو سمجھ سے بالاتر قراردیتے رہے اوردو ممبران اجلاس سے اٹھ کر ہی چلے گئے جبکہ فدا محمد نے پی ٹی سی ایل کی پرائیویٹائزیشن معاہدے کی کاپی نہ ملنے پر اجلاس سے واک آئوٹ کیا۔بدھ کو قائمہ کمیٹی کا اجلاس چیئرپرسن روبینہ خالد کی سربراہی میں پارلیمینٹ ہائوس میں اجلاس شروع ہواتو ممبر کمیٹی فدا محمد نے کہا کہ وزیر کہاں ہیں اگر اجلاس میں وزیر اور وفاقی سیکرٹری ہی موجود نہیں تو اجلاس کا کیا فائدہ ہے۔چیئرپرسن کمیٹی نے کہا کہ یہ بات ٹھیک نہیں، وزیر اجلاس میں ہی نہیں آرہے ہیں۔انہوں نے وزارت کے حکام پر بھی ناراضی کا اظہار کیا کہ کمیٹی کی سفارشات پر خاطر خواہ جوابات نہیں ملے۔ سنیٹر رحمٰن

ملک نے کہا کہ اتنے زیادہ سنیٹر بیٹھے ہوئے ہیں مگر وزیر ہی نہیں اس سے حکومت کی سنجیدگی کا اندازہ ہورہا ہے۔سی ای او اگنائیٹ یوسف حسین نے اگنائیٹ کے بارے میں کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اگنائیٹ تھوک کے ذریعے ٹی بی کی تشخیص کیلئے ٹیکنالوجی پرکام کررہی ہے، دنیا میں یہ ٹیکنالوجی کسی اور کے پاس نہیں،پاکستان یہ ٹیکنالوجی متعارف کرانے والا پہلا ملک ہوگا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں