آپ آف لائن ہیں
جمعرات9؍ محرم الحرام 1440ھ20؍ ستمبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سپریم کورٹ پاکستان نے منرل واٹر کمپنی کے فرانزک آڈٹ کا حکم دیتے ہو ئے 15 روز میں فرانزک آڈٹ کی رپورٹ طلب کر لی۔

لاہور رجسٹری میں منرل واٹر کمپنیوں سے متعلق ازخود نوٹس کی سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نےکی،کمپنی کے وکیل اعتزاز احسن نےاستدعا کی کہ فرانزک آڈٹ ہماری رپورٹ آنے کے بعدکیاجائے،سپریم کورٹ نے اعتزازاحسن کی استدعامستردکردی اوربڑی منرل واٹرکمپنیوں کے پانی کے نمونے چیک کرانےکاحکم دےدیا۔

چیف جسٹس نےدوران سماعت اس موقع پرکہاکہ 15 دن میں فرانزک آڈٹ کی رپورٹ پیش کی جائے،جس کے بعددیکھاجائے گا کہ کمپنیوں کوپانی کی کتنی ادائیگی کرنی چاہئے۔

بنچ کے دوسرے رکن جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ کمپنیاں صرف منافع ہی کمارہی ہیں،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ پانی ایساایشو ہے جسے ہرگزنظراندازنہیں کیاجاسکتا،کیس کے بعدکمپنیاں مناسب قیمت اداکریں گی، ملک کو سرمایہ کاری چاہئے ،اعشاریہ 2 پیسے فی لیٹربہت کم ہیں۔

چیف جسٹس نے کہا کہ لوگوں میں احساس پیداہوگیاہے کہ اب معاملات کو پوچھاجاسکتاہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں