آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ8؍ ربیع الثانی 1441ھ 6؍دسمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

ڈیم فنڈ میں بھرپور حصہ ڈالاجائے گا، نارویجن پاکستانی دینی مراکز

نارویجن پاکستانیوں کی مساجد اور دینی اداروں کے علماء اور منتظمین نے ناروے میں متعین اسلامی جمہوریہ پاکستان کے سفیر ظہیر پرویزخان کو یقین دلایا ہے کہ ڈیمز کے لئے جاری فنڈریزنگ کے سلسلے میں بھرپور تعاون کیا جائے گا۔

یہ یقین دہانی مختلف مکاتب فکر کے نارویجن پاکستانی علماء اور دینی اداروں کے نمائندوں نے اوسلو میں سفارتخانہ میں سفیر پاکستان کی طرف سے منعقد ہونے والی ایک تعارفی تقریب کے دوران کرائی۔

اس موقع پر سفارتخانے کی ڈپٹی ہیڈ آف مشن محترمہ زیب طیب عباسی اور کمیونٹی ویلفیئراتاشی خالد محمود بھی موجود تھے۔

تعارفی تقریب میں جو علماء شریک ہوئے ان میں مسجد مرکزی جماعت اہل سنت اوسلو کے خطیب مولانا سید نعمت علی شاہ بخاری، اسلامک کلچرل سنٹر کے علماء مولانا محبوب الرحمان، مولانا ڈاکٹر حمید فاروق اور مولانا فضل ہادی، انجمن حسینی ناروے کے امام جمعہ علامہ ڈاکٹر سید زوارحسین شاہ، بزم نقشبند اوسلو کے عالم دین مفتی زبیر تبسم، ورلڈ اسلامک مشن اوسلو کے پیش امام حافظ شیرازحسین اور مسجد موٹنسرود اوسلو کے امام مولانا طاہرعزیز شامل ہیں۔

اس موقع پر نارویجن پاکستانی کمیونٹی کے مسائل اور پاکستان کے حالات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ دیگر اہم شخصیات میں توحید اسلامک سنٹرکے سید سجاد کاظمی اور سید سلیم زیدی، پاک۔

ناروے چیمبرآف کامرس کے صدر سید حسنین اشعرعاشی، انجمن حسینی اوسلو کے ملک فداحسین، ملک حسنات عباس، میثم عباس، چوہدری نذیر موجیانوالا اور محمد اشرف بھی شامل تھے۔

سفیر پاکستان ظہیرپرویز خان نے کہاکہ نارویجن پاکستانیوں کی پاکستان کے لیے سماجی خدمات قابل ستائش ہیں۔ ہمیں اس بات پر فخر ہے کہ ہرمشکل وقت میں ان پاکستانیوں نے اپنے ہم وطنوں کی مدد کی ہے۔ انھوں نے اس بات کو بھی سراہا کہ ناروے میں مقیم علماء اور دینی اداروں کے مابین مسلکی حوالے سے کوئی تعصب اور نفرت نہیں۔

سفیر پاکستان نے علماء کی دینی خدمات کو سراہتے ہوئے کہاکہ علماء نے ہمیشہ سختیاں اور مشکلات برداشت کرکے دین کی تقویت کے لیے خدمات انجام دی ہیں۔

مسجد مرکزی جماعت اہل سنت کے امام مولانا سید نعمت علی شاہ نے کہاکہ نارویجن پاکستانی اپنے آبائی وطن پاکستان کے ساتھ بے حد محبت کرتے ہیں اور ہمیشہ دل کھول کر مشکل وقت میں مدد کرتے ہیں۔

اسلامک کلچرل سنٹر کے مولانا محبوب الرحمان نے کہاکہ ناروے میں مسلکی بنیاد پر تعصب نہ ہونا پورے یورپ میں ایک مثال ہے۔

انجمن حسینی ناروے کے نمائندے ملک حسنات عباس نے ڈیم فنڈ کے حوالے سے تجویز دی کہ بزرگوں کے علاوہ نوجوانوں کے ساتھ بھی رابطہ کیا جائے اور انہیں بھی اس بارے میں اعتماد میں لیا جائے۔

مولانا طاہر عزیز نے کہاکہ ڈیم فنڈ کے حوالے سے چندہ جمع کرنے کے لیے ناروے کی ہر پاکستانی مسجد کی انتظامیہ اپنے چارجمعے متخص کرے۔ حافظ شیراز حسین نے کہاکہ نارویجن پاکستانی پاکستان کے لیے ہرقسم کی سماجی خدمات سرانجام دینے کے لیے تیار ہیں لیکن ضرورت اس امر کی بھی ہے کہ جب یہ نارویجن پاکستانی پاکستان جائیں تو ان کو بھی عزت دی جائے اور ان کے مسائل ترجیح بنیادوں پر حل کئے جائیں۔

سفیر پاکستان نے نارویجن پاکستانیوں کے سفارتخانہ پاکستان کے ساتھ رابطوں کے فروغ پر زور دیا اور نارویجن پاکستانی کمیونٹی کے پاکستان کے حوالے سے مسائل کی بابت یقین دلایا کہ ان مسائل کے حل کے لیے بھرپور کوشش کی جائے گی۔

قومی خبریں سے مزید