آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل18؍رجب المرجب 1440ھ 26؍مارچ 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ فضائی آلودگی کی وجہ سے ہر سال پندرہ سال سے کم عمر کے چھ لاکھ بچے موت کا شکار ہو جاتے ہیں۔


عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کے مطابق فضائی آلودگی سے سانس میں انفیکشن کے امراض تیزی سے پھیل رہے ہیں، سال 2016 میں سانس میں انفیکشن کی وجہ سے چھ لاکھ بچوں کی موت ہوئی، آلودہ ماحول لاکھوں بچوں کے لیے زہرقاتل ثابت ہو رہی ہے۔

کرہ ارض پر ہر دس میں سے نو افراد زہریلی ہوا میں سانس لے رہے ہیں جس سے ستر لاکھ افراد ہر سال وقت سے پہلے موت کا شکار ہوجاتے ہیں، فضائی آلودگی سے مرنے والے بچوں میں ہر دس میں سے ایک بچہ پانچ سال سے کم عمر کا ہوتا ہے۔

فضا میں شامل سلفیٹ اور بلیک کاربن پھیپھڑوں اور دل کے امراض کا سبب بنتے ہیں، غریب ممالک کے بچے اس صورتحال کا زیادہ نشانہ بن رہے ہیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں