آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار9؍ربیع الاوّل1440ھ 18؍نومبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

بچوں کے لیے اقوام متحدہ کے ادارے یونیسیف کی رپورٹ کے مطابق پاکستان نومولود بچوں کی اموات کے لحاظ سے دنیا کا سب سے خطرناک ترین ملک قرار پایا ہے جبکہ اس فہرست میں جاپان پہلے نمبر پر ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق یونیسیف کی ایک نئی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان نومولود بچوں کی اموات کے لحاظ سے دنیا کا سب سے خطرناک ترین ملک ہے جہاں ہر 22 ویں بچے کی پیدائش کے بعد ایک بچے کی موت ہوتی ہےجبکہ پاکستان میں نومولود بچوں کی شرح اموات 46 فیصد تک ہے۔

اس فہرست میں مزید 10 ممالک شامل ہیں جنہیں بچوں کی اموات کے لحاظ سے خطرناک قرار دیا گیا ہے۔ سال 2018 کی یونیسیف کی رپورٹ کے مطابق دس بدترین ممالک میں پاکستان سمیت سینٹرل افریقن رپبلک، افغانستان، سومالیہ، جنوبی سوڈان، مالی وغیرہ شامل ہیں۔

دوسری جانب بچوں کی پیدائش کے لحاظ سے دنیا کے سب سے محفوظ ترین ممالک میں جاپان پہلے نمبر پر ہے جہاں پیدائش کے وقت بچوں کی اموات کی شرح 1 فیصد سے بھی کم ہے۔ اس فہرست میں مزید 10 ممالک شامل ہیں جہاں نومولود بچوں کی پیدائش کے وقت ہائی جین کا خاص خیال رکھا جاتا ہے اور انہیں مکمل سہولیات فراہم کی جاتی ہیں۔

یونیسیف کی محفوظ ترین ممالک کی فہرست میں جاپان سمیت سنگاپور، آئس لینڈ، فن لینڈ، سلووینیا، ایسٹونیا، کوریا اور نوروے وغیرہ شامل ہیں۔

رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں 2014 کے اعداد و شمار کے مطابق دس ہزار افراد کے لیے 14 طبی ماہرین دستیاب تھے جبکہ افغانستان میں یہ تعداد 7تھی۔

بچوں کے لیے اقوام متحدہ کے ادارےیونیسیفکا کہنا ہے کہ غریب ممالک میں نوزائیدہ بچوں کی اموات کی شرح میں کمی لانے کے لیے مزید اقدامات کی ضرورت ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں