آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
پیر10؍ربیع الاوّل 1440ھ 19؍نومبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اسلام آباد (نمائندہ جنگ) روس کے دارلحکومت ماسکو میں جاری افغان امن مذاکرات کے دوران طالبان وفد نے امریکی فوجیوں کے افغانستان سے مکمل انخلا کا مطالبہ کردیا ہے، روس کا کہنا ہے کہ ماسکو امن مذاکرات سے با مقصد بات چیت اور مثبت نتائج کیلئے پرامید ہیں۔تین روزہ ماسکو کانفرنس کے حوالے سے آمدہ اطلاعات کے مطابق دوسرے دن بھی روس کی میزبانی میں ماسکو میں جاری افغان امن مذاکرات کا سلسلہ ہفتہ کوبھی جاری رہا۔اورہفتہ کو بھی سربراہی روسی وزیر خارجہ سرگئی لاروف کے حصے میں آئی۔ہفتہ کے سیشن میں طالبان کے مطالبے پر بحث کی گئی، دیگر معاملات پر بھی گفت و شنید ہو ئی اور آج اتوار کو حتمی نتیجے تک پہنچا جائے گا۔قبل ازیں طالبان وفد کے سربراہ نے 17 سالہ افغان جنگ کے خاتمے کوامریکی فوجیوں کے مکمل انخلا سے مشروط کرتے ہوئے کہا کہ امن مذاکرات کا انعقاد خوش آئند ہے لیکن ٹھوس اقدامات کی عملی تعبیر کے بغیر ہر قسم کے بحث و مباحثے ناکام ثابت ہوں گے۔روسی حکام کا کہنا ہے کہ امن کانفرنس کا مقصد مشترکہ جدوجہد کے

ذریعے افغانستان کی تاریخ میں نئے باب کا اضافہ ہوگا، اس سلسلے میں روس تمام فریقین کی سنجیدہ اوربامقصد بات چیت اور مثبت نتائج کیلئے پرامید ہے جس کے لیے تمام فریقین کو اپنا نکتہ نظر پیش کرنے کے لیے آزاد پلیٹ فارم فراہم کیا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں