آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل11؍رجب المرجب 1440ھ 19؍مارچ 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان نے ایک ہفتے سے پریشان کراچی والوں کو خوشخبری سنادی، انہوں نے کہا ہے کہ سندھ کے سی این جی اسٹیشنز کی گیس رات 8 بجے بحال کر دی جائے گی۔

 گورنر سندھ عمران اسماعیل کے ہمراہ نیوز کانفرنس سے خطاب میں غلام سرور خان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے گیس بحران پر انتہائی فکر مندی کا اظہار کیا اور انہوں نے مجھے یہ ہدایت دے کر بھیجا تھاکہ مسئلہ حل کئے بغیر نہ آنا۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج رات 8 بجے سی این جی اسٹیشن کھلوا کر میں 9بجے کی فلائٹ سے واپس چلا جاؤں گا۔

وفاقی وزیر پٹرولیم نے مزید کہا کہ سندھ کی صنعتوں میں گیس کی کوئی لوڈشیڈنگ نہیں ہو گی،کیپٹو پاور پلانٹ کو سردیوں کے 3 مہینوں میں 50 فیصد گیس دی جائے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ زیادہ سے زیادہ ریلیف دینے اور گیس بندش کا دورانیہ کم کرنے کی کوشش کریں گے، لیکن پیچھے سے گیس سپلائی کم ہے،جہاں سے 50 ایم ایم سی ایف ڈی گیس آنی تھی وہاں سے 40 ایم ایم سی ایف ڈی گیس آنا شروع ہو گئی ہے۔

غلام سرور خان نے یہ بھی کہاکہ وزیر اعلیٰ سندھ سے ملاقات ہوئی ہے اور مل کر مسائل حل کرنے کا فیصلہ کیا ہے، سندھ کی حکومت کو بھی ساتھ لے کر چلیں گے۔

انہوں نےمطالبہ کیا کہ سندھ کی حکومت بھی کراچی کے مسائل حل کرے، شہر کو پیچھے دیکھ رہا ہوں، کچرے کے ڈھیر ہیں، یہاں کے دکھوں کا مداوا کریں ۔

وفاقی وزیر پٹرولیم نے مزید کہا کہ گھریلو اور کمرشل صارفین ہماری ترجیح ہیں، ان کے لیے پورے ملک میں گیس لوڈشیڈنگ نہیں ہوگی، میں نے مسائل سنے اور کمیٹی بنا کر ایک میز پر بیٹھ کر اتفاق رائے سے انھیں حل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بجلی کے لیے نیا میرٹ آرڈر بنایا گیا ہے جس میں ہائیڈل پہلے، ونڈ انرجی دوسرے، گیس تیسرے، فرنس آئل آخری نمبر پر ہے۔

غلام سرور خان نے یہ بھی کہاکہ وزیر توانائی سندھ کا گیس پیداوار کے بارے میں دعویٰ 100 فیصد غلط ہے، میرا دعویٰ 100 فیصد درست ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں