آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ15؍ رجب المرجب 1440ھ 23؍مارچ2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

شہنشائے جذبات کہلانے والے دلیپ کمار اور ان کی اہلیہ سائرہ بانو کی شکایت پر وزیراعظم نریندر مودی کان دھرنے کو تیار نہیں۔

ممبئی کے لالچی بلڈر نے عظیم اداکار دلیپ کمار اور سائرہ بانو کے 250 کروڑ روپے کے بنگلے کو ہتھیانے کی کوشش تیز کردی، جعلی کاغذات بنوالئے۔

دلیپ کمار اور سائرہ بانو نے بلڈر کو 200 کروڑ روپے ہرجانے کا نوٹس بھیج دیا ہے تاہم اس سے قبل انہوں نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی سے شکایت کی مگر وہاں سے کوئی جواب نہیں ملا۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق دلیپ کمار اورسائرہ بانو نے بھارتی بلڈر سمیر بھوجوانی کے خلاف 200 کروڑ روپے ہرجانے کا دعویٰ دائر کیا ہے۔

سائرہ بانو کے مطابق بلڈرسمیر بھوجوانی ان کے پالی ہل والے بنگلے کے جعلی کاغذات بناکر ان کا حق چھیننا چاہتا ہے، اس کے ساتھ بھوجوانی نے لوگوں کے سامنے ان کی اور ان کے شوہر دلیپ کمار کی شخصیت کے تاثر کو خراب کرنے کی بھی کوشش کی، جس سے ہم دونوں کو ذہنی اورجسمانی اذیت کاسامنا کرنا پڑا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایک تحریری نوٹس میں بھوجوانی پر 200 کروڑ روپے کے ہرجانے کے ساتھ اس سے معافی کا بھی مطالبہ کیا ہے، یہ نوٹس بلڈر بھوجوانی کے 21 دسمبر 2018 ءکے نوٹس کے جواب میں دیا گیا ہے،جس میں بھوجوانی نے خود کو 250 کروڑ کے بنگلے کا قانونی مالک ظاہر کیا تھا۔

نوٹس میں مزید کہا گیا ہے کہ اگر 10 دن کے اندر 200 کروڑ روپے کی رقم ادا نہیں کی گئی تو بھوجوانی کے خلاف مجرمانہ کارروائی کے لیے شکایت درج کرائی جائے گی۔

سائرہ بانو نے گزشتہ برس 16 دسمبر کو بھی ٹوئٹر پر ایک پوسٹ کے ذریعے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی سے سمیر بھوجوانی کی دھمکیوں کے بعد ملنے کی خواہش کا اظہار کیاتھا۔

دلیپ کمار نے 1953 میں اس بنگلے کی زمین ایک لاکھ 40 ہزار میں خریدی تھی اور 2008 میں اس جگہ کی تزئین و آرائش کے لییرئیل اسٹیٹ فرم پراجیتا ڈیولپرز پرائیویٹ لمیٹڈ کے ساتھ کنٹریکٹ کیاگیا تاہم اس نے اس اراضی پر قبضہ کرلیا تھا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں