آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل18؍رجب المرجب 1440ھ 26؍مارچ 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

’اسلام آباد کے 5 فیصد تعلیمی اداروں میں منشیات کا استعمال ہوتا ہے‘

ڈائریکٹر جنرل اینٹی نارکوٹکس فورس میجر جنرل عارف ملک نے کہا ہے کہ دارالحکومت اسلام آباد کے 4 سے 5 فیصد تعلیمی اداروں میں منشیات استعمال ہوتا ہے۔

گزشتہ ماہ وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار خان آفریدی کے اسلام آباد کے تعلیمی اداروں کی 75 فیصد طالبات اور 55 فیصد طلبہ کے منشیات کے استعمال کئے جانے کا انکشاف کیا تھا۔

آج میڈیا سے گفتگو میں عارف ملک نے کہا کہ اسلام آباد کے تعلیمی اداروں میں منشیات کا زیادہ سے زیادہ استعمال 4یا 5 فیصد ہے۔

انہوں نےکہا کہ اقوام متحدہ کے ادارے کی مدد سے درست اعداد وشمار کے حصول کےلئے سروے بھی کیا جارہا ہے ۔

میجر جنرل عارف ملک نے مزید کہا کہ منشیات ایک عالمی مسئلہ بن چکا ہے،اینٹی نارکوٹکس فورس میں 5 ریجنل ہیڈ کوارٹرز ہیں اور ہمارے اہلکار ڈرائی پورٹس اینڈ سی پورٹس پر بھی تعینات ہیں۔

ڈی جی اے این ایف نے کہا کہ گزشتہ سال ایک ہزار1سو84مقدمات درج کرکے13سو افراد گرفتارکیے ، 100ٹن منشیات برآمد کی ۔

ڈی جی اے این ایف نے بتایا کہ عالمی سطح پر دیگر ملکوں کے ساتھ مل کر بھی 31آپریشن کیے گئے ۔

78افراد کو گرفتار کرکے 15ہزار4سو94میڑک ٹن منشیات برآمد کی ۔

ڈی جی اے این ایف نے کہا کہ پاکستان میں ابھی تک ایک کیس بھی ایسا نہیں ملا کہ منشیات کا پیسہ دہشت گردی میں استعمال ہو لیکن افغانستان میں کچھ حد تک ایسا ہے کہ وہاں منشیات کا پیسہ دہشت گرد گروپوں تک جاتا ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں