آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار16؍رجب المرجب 1440ھ 24؍مارچ 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ورسک گریڈ اسٹیشن کے 2 فیڈرز سے لوڈ منتقل کرکے نیا فیڈر لگایا جائے، ڈپٹی سپیکر کے پی اسمبلی

پشاور ( نیو ز ڈیسک )ڈپٹی سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی محمود جان کی زیر صدارت پیسکو اجلاس اسمبلی کانفرنس روم میں منعقد ہوا .اجلاس میں رکن صوبائی اسمبلی ارباب جہانداد کے علاوہ چیف پیسکو امجد علی، جی ایم بشیر احمدِ‘ ایس ای پشاور سمیع اللہ بنگش اور سٹاف آفیسر حبیب الرحمان نے شرکت کی۔ اجلاس میں ڈپٹی سپیکر نے چیف ایگزیکٹیو پیسکوکو ہدایت کی کہA 132 KV ورسک گریڈ اسٹیشن کے T-1 اورT-2 فیڈرز سے لوڈ منتقل کیا جائے اور دیگر فیڈرز پر لوڈ برابر منتقل کرنے کے لئے موجوہ نیا فیڈر لگایا جائے ۔اس موقع پرچیف پیسکونے متعلقہ آفیسر کو مذکورہ بالا فیڈرز پر برابر لوڈکی منتقلی اور ا یس ای پیسکو سمیع اللہ بنگش کوسابقہ ممبر قومی اسمبلی کے فیڈرز سے میٹرز کی تفصیلی رپورٹ دو دن کے اندر پیش کرنے کی ہدایت کی ۔اجلاس میں ڈپٹی سپیکرنے تجویز پیش کی کہ بجلی کی مد میں اگرمثال کے طورپر 10 لاکھ تک کی کوتاہی کے مرتکب صارفین کو 9 لاکھ set-aside میں رکھے جائیں ۔جبکہ ایک لاکھ میں سے 20ہزار حکومتی خزانے میں جمع کرنے پر بقایا 80 ہزار کو ماہانہ ایک ہزار رواں بل میں شامل کیا جائیگا ‘ اور باقی 9 لاکھ روپے کا مسئلہ صارف اور پیسکو حکام کی باہمی مشاورت سے حل کیا جا ئے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ نئے سنگل فیز میٹر کی قیمت تقریبا7000 روپے ہے جو کہ صارفین پہلے سیکورٹی کی مد

میں فی کلوواٹ فی میٹر کے حساب سے1220 روپے بل میں ادا کرینگے ۔جبکہ باقی رقم رواں بجلی کے بل میں آٹھ اقساط میں ادا کی جائیگی ۔اور جن صارفین کے پاس پرانے خراب میٹرز موجود ہیں وہ مذکورہ میٹرز جمع کرانے پر نئے میٹرز حاصل کر سکتے ہیں۔ گم شدہ میٹرز کی ایف آئی ار کرانے پر بھی نئے میٹرز کا حصول ممکن بنایا جاسکتا ہے۔انہوں نے یہ بھی بتایا کہ پیسکو حکام نے عوا می مسائل کے حل کے لئے کھلی کچری شروع کی ہے جس کے تحت عوامی شکایات کا موقع پر ازالہ کیا جاتا ہے۔ اجلاس میں ڈپٹی سپیکر محمودجان نے کہا کہ نیا میٹرائیزیشن ان صارفین سے شروع کیا جائے ‘جو کہ اس کے خواہشمند ہیں جس پرچیف پیسکو نے ایس ای کو ہدایت کی کہ وہ ڈپٹی سپیکر کے حجرے میں کونسلرز اور علاقہ مشران سے ملاقات کریں اور مسئلے کا حقیقی حل نکا لیں ۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں