آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ16؍ ذیقعد 1440 ھ 20؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

جرمنی میں تمام یورپی کارکنوں کیلئے کم از کم اجرت کا قانون بنے گا

برسلز(این این آئی)یورپی یونین کے رکن کئی ممالک میں کارکنوں کے لیے کم از کم فی گھنٹہ اجرت کے قوانین تو پہلے ہی سے موجود ہیں لیکن اب جرمنی نے پوری یورپی یونین میں عام کارکنوں کے لیے کم از کم اجرت کے ایک مشترکہ قانون کو اپنا ہدف بنا لیا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق وفاقی جرمن وزیر محنت ہوبیرٹس ہائل نے کہاکہ جرمن حکومت نے یورپی یونین کی سطح پر عام کارکنوں کے لیے فی گھنٹہ کم از کم قانونی اجرت کے ایک نئے قانون کی منظوری کو اپنا ہدف بنا لیا ہے، جس کے لیے جرمنی کی طرف سے اس پورے بلاک کی سطح پر بھرپور کوششیں کی جائیں گی۔اپنے اس موقف کی وضاحت کرتے ہوئے جرمن وزیر محنت ہائل نے کہا کہ یورپ کےاقتصادی اتحاد سے دیگر ممالک کی طرح جرمنی نے خود بھی بہت فائدہ اٹھایا ہے۔ لیکن اس مثبت نتیجے کے باوجود یہ بات بھی سچ ہے کہ یونین کے رکن ممالک میں عام کارکنوں کو اپنے ممالک سے جا کر دوسری ریاستوں میں کام کر سکنے کا جو حق حاصل ہے، اسے آج بھی بہت زیادہ حد تک کارکنوں کے معاشی استحصال کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے۔ہائل نے کہاکہ اسی لیے یہ ضروری ہے کہ یونین کی رکن تمام ریاستوں میں سماجی سطح پر ایک ہی طرح کی کم از کم فی گھنٹہ اجرتوں کا ایک ایسا مشترکہ قانون نافذ کیا جائے، جو اس استحصال کا راستہ روک سکے اور یورپی کارکنوں کو، چاہے وہ

کسی بھی رکن ملک میں کام کر رہے ہوں، ان کی محنت کا ہمیشہ ایسا مالی معاوضہ ملے، جو منصفانہ ہو۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں