آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات12؍شعبان المعظم 1440ھ 18؍ اپریل 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
لندن(آئی این پی) سماجی رابطے کی معروف ویب سائٹ فیس بک نے روس کی جانب سے امریکی صارفین کو ٹارگٹ کرنے پر اس کے خلاف جاری آپریشن میں روس سے تعلق رکھنے والے سیکڑوں پیجز، گروپس اور اکانٹس بند کر دئیے غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کمپنی کا کہنا تھا کہ انہوں نے 2 نیٹ ورک کو فیس بک اور انسٹاگرام پر مشتبہ کارروائیوں میں ملوث پایا اور غلط معلومات عام کرنے کے خلاف تازہ ترین کارروائی کی۔اس بارے میں فیس بک کی سائبر سیکورٹی پالیسی کے سربراہ نتھانیل گلچر نے ایک بلاگ پوسٹ کیا جس میں کہا گیا کہ ایک نیٹ ورک وسطی اور مشرقی یورپ، بالٹک ریاستوں، وسطی ایشیا اور قفقاز میں کام کررہا تھا جبکہ دوسرا یوکرین میں کام کررہا تھا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ہمیں ان دونوں کے درمیان باہمی روابط نہیں ملے لیکن دونوں نے صارفین کو ایک ہی طرح ٹارگٹ کر کے غلط معلومات پھیلانے کی کوشش کی۔فیس بک انتظامیہ کے مطابق یہ نیٹ ورک اور اکانٹس چلانے والے افراد نے خود کو خبروں کے آزاد ذرائع کے طور پر ظاہر کیا اور نیٹو مخالف جذبات اور احتجاجی تحریکوں کے بارے میں پوسٹس کیں۔نتھانیل گلچر کا مزید کہنا تھا کہ ایک نیٹ ورک 364پیجز اور اکائونٹس پر مشتمل تھا جو اسپٹنک ملازمین سے منسلک تھے، خیال رہے کہ اسپٹنک، روس کی سرکاری انگریزی زبان کی نیوز سائٹ ہے جسے سوشل

میڈیا پیجز پر تقریباً 7لاکھ 90ہزار اکائونٹس نے فالو کررکھا ہے۔ مذکورہ مشکوک پیج نے فیس بک کو اشتہارات کی مد میں 6 سال کے عرصے میں تقریبا ایک لاکھ 35 ہزار ڈالر کی ادائیگی کی اور یہ رقم یورو، روبل اور ڈالر کرنسی کی شکل میں دی گئی، اس سلسلے میں سب سے حالیہ اشتہار جنوری میں چلایا گیا تھا۔دوسری جانب اسپٹنک نے فیس بک کے اس اقدام پر تنقید کرتے ہوئے اسے سراسر سیاسی اور سینسر شپ کا حصہ قرار دیا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں