آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ14؍جمادی الثانی 1440ھ 20؍فروری 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سندھ میں مشیروں کی تعیناتی کے معاملے پر گورنر سندھ عمران اسماعیل اور وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ آمنے سامنے آگئے۔

ذرائع کے مطابق گورنر اور وزیر اعلیٰ نے ایک دوسرے کی بھیجی گئی سمریاں روک لیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ گورنر سندھ عمران اسماعیل نے اعجاز جاکھرانی کو وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ کا مشیر بنانے سے متعلق سمری روک دی۔

ذرائع کہتے ہیں کہ پیپلز پارٹی کی اعلیٰ قیادت بھی گورنر سندھ عمران اسماعیل کے رویے پر ان سے ناراض ہے، صوبائی وزیر ناصرشاہ کافی کوششوں کے باوجود گورنر عمران اسماعیل کو نہیں منا سکے۔

ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ اس سے پہلے وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ گورنر عمران اسماعیل کی جانب سے مشیر کی تعیناتی کی سمری روک چکے ہیں۔

ذرائع کے مطابق گورنر سندھ تحریک انصاف کے رہنما امیدعلی جونیجو کو مشیر بنانا چاہتے ہیں، جن کی تقرری کی سمری ڈھائی ماہ سے وزیر اعلیٰ سندھ نے روک رکھی ہے۔

ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ اس حوالے سے وزیر اعلیٰ ہاؤس کا مؤقف ہے کہ گورنر سندھ کو مشیر مقرر کرنے کا قانونی اختیارنہیں ہے۔

ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ اس ضمن میں گورنر ہاؤس اور وزیر اعلی ہاؤس میں فی الحال رسہ کشی جاری ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں