آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات15؍ جمادی الثانی 1440ھ 21؍فروری 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ پاکستان کے لیے یہ انتہائی اہم ہے کہ وہ افغان عمل کا حصہ بنے۔

چیئرمین پی پی پی نے واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ امریکی فوج کے انخلاء کے بعد کی صورت حال کے لیے ہمیں منصوبہ سازی کرنی چاہیے، کسی بھی تنازع کا حل مصالحت ہے۔

انہوں نے کہا کہ اسے مصالحت نہیں کہتے کہ آپ دشمن کو اطمینان دلائیں اور مطالبات مان لیں، مصالحت تب ہوتی ہے جب تمام فریق غلطی کا احساس کریں اور ذمہ داری قبول کریں۔

بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ غلطیوں پر نادم ہونے کے بعد سمجھوتے پر پہنچیں تو اسے مصالحت کہتے ہیں، اگر آپ ایک فریق کومطمئن کریں، مطالبات مانیں، مفاہمت کریں تو یہ پاکستان اور خطے کے لیے تباہ کن ہو گا۔

انہوں نے پاک امریکا تعلقات اور افغانستان کی صورت حال پر یو ایس انسٹیٹیوٹ آف پیس میں بھی خطاب کیا۔

بلاول کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان نے بے شمار قربانیاں دیں ،پاکستان کا امن افغانستان سے جڑا ہوا ہے ۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں