آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ18؍رمضان المبارک1440 ھ24؍مئی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
جنیوا(اے این این )اقوام متحدہ کے انسانی حقوق ہائی کمیشن کی طرف سے جاری کردہ بیان میں فلسطین میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں انسانی حقوق کی پامالیوں کی شدید مذمت کی ہے۔غیرملکی میڈیاکے مطابق اقوام متحدہ کے انسانی حقوق ہائی کمیشن کی طرف سے جاری کردہ بیان کہا گیا ہے کہ اسرائیلی فوج غزہ کی پٹی میں ہفتہ وار ہونے والے حق واپسی مظاہروں کے دوران مظاہرین کے خلاف طاقت کا وحشیانہ استعمال کرتی ہے جس کے نتیجے میں بڑی تعداد میں فلسطینی مظاہرین شہید اور زخمی ہوئے ہیں۔جنیوا میں انسانی حقوق کے ہائی کمشنر میشیل باشیلیٹ نے ایک بیان میں کہا کہ غزہ کی پٹی میں اسرائیلی ریاست کے انتقامی حربوں کی وجہ مقامی معیشت تباہ ہوچکی ہے۔اسرائیلی فوج غزہ کی پٹی میں مظاہرین کے خلاف طاقت کے استعمال سے مقامی آبادی کے سیاسی اور شہری حقوق بری طرح مثاثر ہوئے ہیں۔انسانی حقوق کی ہائی کمیشن کے مطابق غزہ کی پٹی میں بے روزگاری کی شرح میں 50 فی صد تک پہنچ چکی ہے جب کہ غزہ کی پٹی کے 70 فیصد عوام بیرون ملک جائیداد پر انحصار کرتے ہیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں