آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار 17؍ذیقعد 1440ھ21؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

وفاقی کابینہ نے 278 ارب روپے کے قومی زرعی ایمرجنسی پروگرام، ایف بی آر میں اصلاحات کے مجوزہ منصوبے کی منظوری دے دی۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت  کابینہ کا اجلاس 5 گھنٹے جاری رہا، جس میں سانحہ کرائسٹ چرچ کی سخت مذمت اور دہشت گرد سے لڑنے والے شہید پاکستانی نعیم رشید کو خراج عقیدت پیش کیا گیا اور شہداء کےلئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی۔


اجلاس میں ملک کی سیاسی،معاشی اور سلامتی صورتحال کا جائزہ بھی لیا گیا اور سرکاری اداروں کے سربراہان کے تقرر کے طریقہ کار کی بھی منظوری دی گئی۔

وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ یہ مسلمہ حقیقت ہے کہ دہشت گرد کا کوئی مذہب نہیں ہوتا،پاکستان ہر قسم کی دہشت گردی کی شدید مذمت کرتا ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ دکھ کی اس گھڑی میں سانحہ کرائسٹ چرچ کے شہداء کے اہلخانہ سے اظہارِ ہمدردی کرتے ہیں۔

وفاقی کابینہ نے اجلاس میں278 ارب روپے کے قومی زرعی ایمرجنسی پروگرام کی منظوری دی اور بلوچستان سمیت ملک بھر میں زرعی شعبے کی بہتری کےلئے اقدامات کی سفارش کی۔

وفاقی کابینہ نے وزراء و سینئر حکام کے’انٹرٹینمنٹ اینڈ گفٹ بجٹ‘  کو ختم کرنے کے بل کی منظوری دیتے ہوئے آئندہ اجلاس میں مزید سفارشات طلب کرلی ہیں۔

وفاقی کابینہ نے متروکہ وقف املاک بورڈ پر ٹاسک فورس قائم کرنے کی منظوری بھی دی، اقلیتی ارکان کو ٹاسک فورس میں شامل کیا جائے گا اس سلسلے میں تمام متعلقہ اداروں سے سفارشات طلب کرلی گئیں۔

وفاقی کابینہ نےعبدالرحمان وڑائچ کو ڈیٹ پالیسی کوآرڈینیشن آفس کا ڈی جی تعینات کرنے اور سرکاری اداروںٕ کے سربراہاں کی تعیناتیوں کےطریقہ کار کی منظوری بھی دے دی اور اقتصادی رابطہ کمیٹی کے فیصلوں کی تو ثیق بھی کی گئی۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں