آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل21؍شوال المکرم 1440ھ 25؍جون 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
کراچی (اسٹاف رپورٹر) کراچی با ر کے ممبر ا ن نے سٹی کورٹ ماڈل کورٹس کو کام کرنے سے روکدیا۔ جبکہ کر ا چی بار ا یسو سی ا یشن نے ما ڈ ل کو رٹ میں پیش ہو نے و ا لے و کیل کا لا ئسنس معطل کر ا د یا ۔ وکلا نے زبردستی ماڈل کورٹس میں کام بند کروا دیا۔ قانون کے رکھوالے قانون ہاتھ میں لینے لگے، وکلا نے زبردستی ماڈل کورٹس میں کام بند کروا دیا عدالتوں میں موجو دوکلا اور ملزمان کو باہرنکال دیا۔ ماڈل کورٹس کے ججز وکلا کے دباو¿ پر سماعت ختم کرکے چیمبرز میں چلے گئے۔سائوتھ کی ماڈل کورٹ میں سرکاری وکلا اور کراچی بار کے عہدیداروں میں تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا، سرکاری وکلا نے کہا کہ پہلے سپریم کورٹ میں ہڑتال کروائیں پھر ہمیں روکیں۔ دوسری جانب کر ا چی با ر ا یسو سی ا یشن نے ما ڈ ل کو ر ٹ میں پیش ہو نے و ا لے و کیل کا لا ئسنس معطل کر ا د یا ۔سپر یم نے ملک بھر میں مقد ما ت جلد نمٹا نے کیلئے ما ڈ ل کو رٹ تشکیل د ی تھی کہ قتل کے مقد ما ت جلد ا ز جلد نمٹا ئے ا و ر مقد مات کے فیصلے تین یو م میں کئے جا ئیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں