آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ19؍رمضان المبارک 1440 ھ25؍مئی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

جامعہ بلوچستان میں غریب طلباء کیلئے دروازےبند ہورہے ہیں‘بی ایس او

کوئٹہ(پ ر) بی ایس او کے مرکزی ترجمان نے کہا ہے کہ بلوچستان یونیورسٹی کی تعلیم کش پالیسیوں کی وجہ سے سائنس فکلٹی سمیت دیگر اہم شعبہ جات میں بلوچ علاقوں کے ستر فیصد سے زائد طلباء و طالبات داخلوں سے رہ گئے ہیں حالیہ فیسوں میں اضافہ اور ہائیر ایجوکیشن کمیشن کی تعلیم دشمن پالیسیوں اورسیلف فنانس اسکیم کے تحت داخلوں سے غریب طلباء وطالبات پر تعلیم کے دروازے بند ہونے کا خطرہ ہے ترجمان نے کہاکہ اٹھارویں ترمیم کے بعد یونیورسٹیز کے مسائل صوبائی حکومتوں نے حل کرنے ہیں لیکن بلوچستان حکومت کی نااہلی اور کرپشن کی وجہ سے یونیورسٹی کیلئے اب تک قانون سازی اور صوبائی ہائیرایجوکیشن تشکیل نہیں جاسکا طلباء تنظیموں کے احتجاج کے بعد بلوچستان اسمبلی نے جامعہ بلوچستان کے حوالے سے سفارشات مرتب کیں جن پر عمل نہیں ہورہاموجودہ اسمبلی کی یونیورسٹی کے مسائل پر خاموشی مجرمانہ عمل ہے ۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں