آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات 20؍ ذوالحجہ 1440ھ 22؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سری لنکا میں ایسٹر کے موقع پر 8 دھماکوں کے نتیجے میں ہلاکتوں کی تعداد 207 ہوگئی جبکہ 500 سے زائد افراد زخمی ہیں۔

سری لنکن میڈیا کے مطابق بدترین دہشت گردی سے اتوار کو سری لنکا دھماکوں سے لرز اُٹھا، حملہ آوروں نے سری لنکا کے دارالحکومت کولمبو اور تین شہروں میں گرجا گھروں اور فائیو اسٹار ہوٹلوں کو 8بم دھماکوں سے نشانہ بنایا، دھماکوں کے بعد پورے ملک میں 12گھنٹے کا کرفیو نافذ کردیا گیا ہے جبکہ سیکورٹی فورسز نے 8 مشتبہ افراد کو حراست میں لے لیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پہلا دھماکا کولمبو میں سینٹ انتھونی چرچ میں، دوسرا سینٹ سبیس ٹین کولمبو کے باہر کے علاقے میں اور تیسرا کولمبو کے علاقے بٹی کالاؤ کے گرجا گھر میں ہوا ہے جبکہ نشانہ بننے والے تین ہوٹلوں میں دی شینگریلا، سینامن گرانڈ اور کنگز بری شامل ہیں۔

ریسکیو حکام کے مطابق مرنے والوں میں 35 غیر ملکی بھی شامل ہیں، جن میں5برطانوی اور 3بھارتی شہری بھی ہیں اس کے علاوہ ڈنمارک، ترکی اور چین کے دو، دو افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ نیدر لینڈز اور پرتگال کا ایک ایک شہری بھی ان حملوں میں مارا گیا ہے۔

سری لنکن وزیر اعظم نے بم دھماکوں کی مذمت کرتے ہوئے دھماکوں کو بزدلانہ اقدام قرار دیا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ سری لنکن عوام اس مشکل وقت میں متحد اور مضبوط رہیں، حکومت موجودہ صورتحال کے حل کے لیے فوری اقدامات کررہی ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ گرجا گھروں میں دھماکے ایسٹر کی دعائیہ تقریبات کے دوران ہوئے۔ 

بین الاقوامی خبریں سے مزید