آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار 16؍ذوالحجہ 1440ھ 18؍اگست 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

والد کا نام ہٹا کر بنت پاکستان لکھوانا شرعاً درست نہیں، اسلامی نظریاتی کونسل نے تطہیر فاطمہ کیس کے سلسلے میں اپنا فیصلہ وزارت قانون کو ارسال کردیا۔

گذشتہ روز اسلامی نظریاتی کونسل کے اجلاس میں تطہیر فاطمہ کیس پر غور کیا گیا، کونسل کے فیصلے کے مطابق والدین کے بارے میں علم ہونے کے باوجود ان کے علاوہ کسی اور کی طرف اپنی نسبت کرنا جائز نہیں ہے۔

کونسل نے فیصلہ دیا کہ والد کا نام ہٹا کر ’’بنت پاکستان‘‘ لکھوانا شرعاً درست نہیں اور اس طرح کی کوششوں کی حوصلہ شکنی ہونی چاہیے۔

تطہیر فاطمہ نامی لڑکی نے سپریم کورٹ میں درخواست دی تھی کہ اس کے نام کی تمام سرکاری دستاویزات میں حقیقی والد شاہد ایوب کا نام ہٹا کر اس کی جگہ بنت پاکستان لکھا جائے۔

قومی خبریں سے مزید