آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات17؍رمضان المبارک 1440ھ 23؍مئی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کہتے ہیں کہ حکومت نےاخراجات کم کرنے کے لیےٹھوس اقدامات کیے ، دستیاب وسائل سے بھر پور استفادے کیلئے کوشاں ہیں۔

سرمایہ کاری تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کا کہنا ہے کہ یہ وقت کی ضرورت ہے کہ سرمایہ کاری کے فروغ کے لیے مل بیٹھ کر بات کریں، لوگوں کو ترقی دیے بغیر ہم اقتصادی ترقی نہیں کر سکتے، کوئی ملک اکیلے ترقی نہیں کرتا، مل کر ساتھ چلنا ہو گا، باہمی شراکت داری کے بغیر ملکوں کی اقتصادی ترقی ممکن نہیں۔

انہوں نے کہا کہ غیرملکی سرمایہ کاری سے معیشت میں استحکام آئے گا، ہمیں کامیاب ممالک کو دیکھنا ہو گا کہ انہوں نے کیسے ترقی کی، دنیا میں کسی بھی ملک نے تنہا ترقی نہیں کی، مل کر ساتھ چلنا ہو گا، چین اور بھارت سمیت دیگر ممالک نے ایک دوسرے کے ساتھ تجارت کے راستے نکالے۔

عبدالحفیظ شیخ نے کہا کہ شروع سے ہی پاکستان نے برآمدات کے فروغ اور غیر ملکی سرمایہ کاری کے لیے مؤثر اقدامات نہیں کیے، حکومت آئی تو ایکس چینج ریٹ زیادہ ہونے کے باعث برآمدات کم تھی، جیو اور جنگ کی طرف سے کانفرنس کے انعقاد پر شکر گزار ہیں، یہ وقت کی ضرورت تھی کہ سرمایہ کاری کے فروغ کے لیے مل بیٹھ کر بات کریں۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں کامیاب ممالک کو دیکھنا ہو گا کہ انہوں نے کیسے ترقی کی؟ معاشی حالات کی بہتری کے لیے اقدامات کیے گئے ہیں، چند ہفتوں میں بجٹ آنے والا ہے، معاشی فریم ورک تشکیل دینا ہو گا،مالی خسارے کو کم کرنا ہے، ریونیو شعبہ مستقبل کے تقاضوں کے مطابق لانا ہو گا۔

مشیر خزانہ نے مزید کہا کہ گزشتہ 13 سال میں کسی کمپنی کی نج کاری نہیں کی گئی، مہنگائی ایک مسئلہ ہے جس پر حکومت پریشان ہے، تیل کی قیمتوں میں اضافے پر حکومت کا کنٹرول نہیں،درآمدات میں کمی کی جائے گی، عام لوگوں کی فلاح و بہبود کے لیے اقدامات کیے جائیں گے، معاشرے میں پیچھے رہ جانے والوں کے لیے سوشل پروگرام شروع کیے جائیں گے۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ مذکرات چل رہے ہیں، آئی ایم ایف کے ساتھ مناسب پروگرام طے ہو جائے گا، چین کے ساتھ آزادانہ تجارت میں تبدیلی لائے ہیں، وزیر اعظم عمران خان چین کے صدر کے ساتھ معاہدہ کر بھی لیں تو نجی شعبے کے تعاون کے بغیر مؤثر نہیں، سرمایہ کاری کے فروغ کے لیے پہلے سے موجود سرمایہ کاروں کے ساتھ مثبت رویہ اختیار کرنا ہو گا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں