آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ16؍رمضان المبارک 1440ھ22؍ مئی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ امریکا کی طرف سےکوئی ویزا پاپندیاں نہیں لگائی گئیں۔

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خارجہ کے اجلاس میں شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ امریکا کی طرف سےکوئی ویزا پاپندیاں نہیں لگائی گئیں، امریکی سفارتحانے نے پریس ریلیز بھی جاری کی ہے، امریکا نےغیر قانونی طور پر مقیم پاکستانی پکڑے جن کو وہ واپس بھیجنا چاہتا ہے اور اس سلسلے میں 70 سے زیادہ پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کیاجارہا ہے جو کل پاکستانی خصوصی پرواز سے آرہے ہیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکا چاہتا ہے کہ ان 70 پاکستانیوں کو پاکستان قبول کرے لیکن ہم نے انہیں قانونی تقاضوں کو پورا کرنے کا کہا ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ وزارت داخلہ کے تین افسران پر کچھ وجوہات کی بناء پر وزٹ ویزا کی پابندی لگائی گئی ہے، ان افسران میں جوائنٹ سیکریٹری، ایڈیشنل سیکریٹری داخلہ اور ڈی جی پاسپورٹ شامل ہیں، یہ پابندی پاکستان پر نہیں لگی، اس کی وضاحت دونوں طرف سے کردی گئی ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ جتنا ویزا امریکا دے گا، اتنا ہی پاکستان دے گا، اگر امریکا 5 سال کا ویزا دے گا تو پاکستان بھی 5 سال کا ویزا دے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکا کی ساؤتھ ایشیاء کی اسٹریٹجک پالیسی میں تبدیلی آئی ہے، امریکی حکومت سمجھتی ہے کہ افغان حکومت کو مذاکرت کی میز پر ہونا چاہیے، طالبان امریکا سے براہ راست مذاکرت کرنا چاہتے ہیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں