آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ19؍رمضان المبارک 1440 ھ25؍مئی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اسلام آباد ہائی کورٹ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس محسن اختر کیانی نے امن ترقی پارٹی کے چیئرمین کی درخواست پر کیس کی سماعت کی۔

دورانِ سماعت جسٹس محسن اختر کیانی درخواست گزار پر برہم ہوگئے، انہوں نے کہا کہ قیمتوں کا تعین کرنا عدالت کا کام نہیں،قیمتوں کا تعین کرنا جن اداروں کا کام ہے انہیں اپنا کام کرنے دیں۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ یہ ٹھیک ہے کہ ان کی نااہلی ہے اس کا یہ مطلب نہیں کہ ہر معاملہ عدالت لے آئیں۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے استفسار کیا کہ کیا آپ نے عدالت سے پہلے متعلقہ فورم سے رجوع کیا تھا؟ عدالت کو بتائیں کہ اوگرا آرڈیننس کے تحت قیمتوں کا تعین کون کرتا ہے؟

درخواست گزار کے وکیل نے بتایا کہ میرے پاس اوگرا آرڈیننس موجود نہیں۔

جس پر جسٹس محسن اختر کیانی نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کاغذات ہیں نہیں اور بغیر تیاری منہ اٹھا کر عدالت آ جاتے ہیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں